امریکی بحریہ نے میزائل حملہ روک دیا، دو جہاز بحفاظت خلیج عدن بھیج دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی وزارت دفاع کے لیے کارگو سروسز دینے والے میرسک کے دو جہازوں کو امریکی بحریہ نے میزائل حملے سے بچا لیا یے۔یہ اطلاع میرسک کی طرف سے باضابطہ انداز میں دی گئی ہے۔

امریکی جہاز راں کمپنی میرسک میزائل حملے کے بعد دونوں جہازوں کو بحفاظت خلیج عدن بھیج دیا گیا ہے۔ خلیج عدن تک امریکی بحریہ نے اپنے حفاظتی حصار میں پہنچایا ہے۔

میزائل حملوں کا واقعہ باب المندب کے نزدیک پیش آیا ہے۔ واضح رہے بحیرہ احمر میں کئی ہفتوں سے صورت حال سنگین ہے۔

تاہم امریکی بحریہ نے میزائل فائر کیے جانے کی اطلاع ملتے ہی اس حملے کو ناکام بنا دیا۔
میرسک کی طرف جاری کردہ بیان کے مطابق دونوں جہاز محفوظ رہے ہیں۔ جبکہ امریکی بحریہ نے مزید کئی راکٹ بھی روکے ہیں۔ اس حملے کی ابھی کسی نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

میرسک کے مطابق یہ دونوں جہاز میرسک کی ذیلی کمپنی سے تعلق رکھتےہیں جو امریکی فوج اور محکمہ دفاع و دیگر کے سامان کی منتقلی کی ذمہ داری انجام دیتے ہیں۔ بیان کے مطابق دونوں جہازوں کا عملہ بھی مکمل محفوظ رہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں