سابق عراقی رکن پارلیمنٹ کا ساتھی مرد پارلیمنٹیرین پر ہراسانی کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراق کی سابق رکن پارلیمنٹ ریزان الشیخ دلیر نے انکشاف کیا ہے کہ عراقی پارلیمنٹ میں خواتین ارکان پارلیمنٹ کو مرد ارکان پارلیمنٹ کی طرف سے ہراساں کیا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عراق کے بہت سے اداروں میں عام طور پر روک تھام کے اقدامات نہ ہونے کی وجہ سے ہراسانی کے واقعات بڑھ رہے ہیں۔

ریزان الشیخ دلیر نے العربیہ چینل سے نشر ہونے والے"انٹرایکشن" پروگرام میں کہا کہ عراق اور تمام سرکاری اداروں میں خواتین کو ہراساں کرنا معمول بن چکا ہے۔ پارلیمنٹ میں کئی ایسے واقعات ریکارڈ کیے گئے، جن میں زبانی طور پر ہراساں کرنا یا یہاں تک کہ ناقابل قبول لطیفے بھی سامنے آئے۔ خواتین ارکان کی طرف سے اس طرح کے واقعات کی شکایات عام ہیں۔

ریزان دلیر کی طرف سے پہلے بھی اس نوعیت کے بیانات سامنے آتے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی قوتیں خواتین کو ایک کمزور وجود کے طور پر دیکھتی ہیں جو معاشرے میں اپنا کردار ادا نہیں کر سکتیں جیسا کہ وہ دوسرے تمام ممالک میں کرتی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں