ابو ظہبی دنیا میں محفوظ ترین قرار، تائیوان دوسرے، دوحہ تیسرے اور دبئی چوتھے نمبر پر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ابوظہبی دنیا کے محفوظ ترین قرار دیے گئے شہروں میں پہلے نمبر پر آگیا ہے۔ جبکہ تائیوان نے اس فہرست میں دوسری ، قطری دارالحکومت نے تیسری اور دبئی نے چوتھی پوزیشن حاصل کی ہے۔

متحدہ امارات کو دنیا کے محفوظ ترین علاقوں میں سب سے اوپر دیکھا گیا ہے، جس نے چھیاسی اعشاریہ نو نمبر لیے ہیں اور جرائم کے ارتکاب یا اعداد وشمار کے حوالے سے دنیا بھر میں سب سے نیچے ہے۔ امارات میں جرائم کی شرح 13،1 ہے۔

اس کے مقابلے میں وینزویلا کا شہر کارکاس میں تحفظ کے لیے اقدامات اور ماحول کمترین نمبروں کے ساتھ دنیا کے غیر محفوظ ترین شہروں سے سب سے اہم ہے۔ کارا کاس میں جرائم کی شرح 82،2 ہے جبکہ اس کا محفوظ ماحول میں نمبر 17،8 ہے۔

اسی فہرست میں دبئی نے محفوظ شہر ہونے کے ناطے 83،5 نمبر حاصل کیے ہیں اور اس کے ہاں جرائم کی شرح 16،5 بتائی گئی ہے۔

'نمبیو' کی ویب سائٹ کے مطابق یہ اعدادو شماران ملکوں کے دورروں پر آنے والے سیاحوں اور دوسرے افراد سے کیے گئے 'سرویز۔ کی بنیاد پر مرتب کیے گئے ہیں۔ اس سلسلے میں ' نیمبیو ' کی ویب سائٹ کا بتانا ہے کہ مجموعی طور پر 195 ملکوں سے متعلق رپورٹس ، سرویز اور اعداد و شمار سے مدد لی گئی ہے۔

ویب سائٹ کے مطابق محفوظ شہروں کے بارے میں انڈکس ان میں جرائم کے حوالے سے انڈکس کے برعکس ہوتا ہے۔ ویب سائٹ کے مطابق اس سلسلے میں 20 ملکوں کو سب سے محفوظ قرار دیا گیا ہے، 20 سے 40 ملکوں کو کم ان بیس ملکوں سے کم درجے پر محفوظ کہا گیا ہے۔

اسی طرح 40 سے 60 کے درمیان آنے والے ملکوں کو درمیانے محفوظ ملکوں میں شامل کیا گیا ہے۔ سب سے زیادہ غیر محفوظ ملک قرار دیا گیا ہے۔ یہ معیار ان میں جرائم کی شرح کے حوالے سے ہے۔ بلکہ ویب سائٹ کے مطابق جرائم کی شرح کے بالکل برعکس ہے۔

گویا جو ملک سب سے زیادہ محفوظ ہیں اور ان میں جرائم اسی شرح سے سب سے کم ہیں اور جو ملک سب سے زیادہ غیر محفوظ بتائے گئے ہیں ان میں جرائم کی شرح سب سے بلند ہے۔

واضح رہے ابو ظہبی نے 2023 میں محفوظ ترین ملکوں کی فہرست میں دوسری پوزیشن حاصل کی تھی جبکہ اس سے پچھلے سال 2022 میں ابوظہبی ساتوٰیں نمبر پر محفوظ تر قرار پایا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں