اونروا کو فلسطین میں کام جاری رکھنا چاہئے: سعودی وزارت خارجہ

'اونروا' پر الزامات کے شواہد سامنے لائے جائیں اور امدادی کام کے لیے فنڈنگ جاری رکھی جائے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی وزارت خارجہ نے پیر کے مطالبہ کیا ہے کہ فلسطینی پناہ گزینوں کے لیے انسانی بنیادوں پر کام کرنے والے ادارے 'اونروا' پر لگائے گئے اسرائیلی الزامات کی تحقیقات کی جائیں اور اگر حقائق کی بنیاد پر کچھ شواہد ہوں تو سامنے لائے جائیں۔

مملکت کی طرف سے یہ مطالبہ اس وقت سامنے آیا ہے جب 12 'اونروا 'کارکنوں پر اسرائیل کے اس الزام کہ 'انہوں نے سات اکتوبر کو اسرائیل پر حملے میں حصہ لیا تھا' کے فوری بعد امریکہ نے 'اونروا ' کی اضافی فنڈنگ روکی ہے۔

بعد ازاں امریکہ کی پیروی میں برطانیہ، اٹلی، سوئٹزر لینڈ، کینیڈا، آسٹریلیا اور جاپان نے بھی اس کے لیے فنڈز روک دیے۔ امریکہ اور اس کے اتحادی ملکوں کی طرف سے یہ اقدام اس کے باوجود سامنے آ گیا کہ اسرائیل کے الزام کی تحقیقات ابھی شروع نہیں ہوئی تھیں۔ جبکہ 'اونروا' سربراہ نے 9 'اونروا ' کارکنوں کو ملازمت سے برطرف بھی کر دیا اور 2کی تلاش اور شناخت کا عمل ابھی جاری ہے۔

'اونروا' کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ ان بارہ کارکنوں میں سے ایک کی ہلاکت ہو چکی ہے۔ ان سب کے بارے میں ایک جامع اور آزادانہ تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔

اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاہو نے غزہ میں جنگ کے بعد 'اونروا' کی فلسطینیوں کے لیے امدادی سرگرمیوں کو بند کرنے کی دھمکی بھی دے دی ہے۔

دوسری جانب اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے 'اونروا' کی امداد نہ روکنے کی اپیل کی ہے۔ فلسطینی اتھارٹی نے بھی 'اونروا' کے لیے فنڈز کی فراہمی روکنے کے بجائے فنڈز کی فراہم جاری رکھنے پر زور دیا ہے۔

اس پس منظر میں سعودی وزارت خارجہ نے پیر کے روز کہا ' یہ ضروری ہے کہ حقائق اور شواہد کی بنیاد پر تحقیقاتی رپورٹ سامنے لائی جائے۔ ' مملکت کی طرف سے یہ بھی کہا گیا ہے کہ ' مملکت اس بارے میں ہونے والی تحقیقات سے متعلقہ پیش رفت پر نظر رکھے ہوئے ہے۔ '

سعودی عرب کی طرف سے اس امر پر بھی زور دیا گیا ہے کہ کہ ان الزامات کا جائزہ لیا جائے جو 'اونروا' کے چند کارکنوں پر لگائے گئے ہیں۔ نیز جو ملک غزہ میں انسانی بنیادوں پر امداد کر رہے ہیں انہیں چاہیے کہ اس ادارے کی حمایت جاری رکھیں، تاکہ یہ انسانی بنیادوں پر اپنا کام جاری رکھ سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں