فلسطین اسرائیل تنازع

اسرائیلی فوج نے غزہ کے قبرستان سے نکالی گئی فلسطینیوں کی لاشیں واپس بھیج دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیل کی طرف سے منگل کے روز وہ متعدد فلسطینیوں کی لاشیں واپس غزہ میں واپس بھیج دی گئی ہیں ۔ جوتقریباً دو ہفتے قبل اسرائیلی فوج قبروں سے نکال کر اپنے ساتھ لے گئی تھی۔ بعد ازاں ان لاشوں کو اپنے قبضے میں رکھا۔ بمباری میں ہلاک ہوئے فلسطینیوں کی لاشیں خان یونس کے نزدیکی قبرستان کی قبریں اکھاڑ کر نکالی گئی تھیں۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے ' اے ایف پی ' کے فوٹو گرافر کے مطابق انہوں نے نیلے رنگ کی پلاسٹک شیٹس میں لپٹی ہوئے فلسطینیوں کی لاشیں ایک بڑی اجتماعی قبر کی طرف ایک ٹرک پر لائی گئیں۔

مصری سرحد کے نزدیک رفح راہداری پر فلسطینی ذرائع نے 'اے ایف پی' کو بتایا کہ واپس لائی گئی لاشیں "غزہ میں اسرائیلی فوج نے اپنی دراندازی کے دوران قبروں سے چوری کر لی تھیں۔

غزہ کی وزارت مذہبی امور کے ایک ذریعے کے مطابق اسرائیلی فوج نے تقریباً دو ہفتے قبل یہ لاشیں خان یونس کے مشرق میں واقع بنی سہیلہ قبرستان سے چوری کی تھیں۔

بتایا گیا ہے کہ یہ درجنوں فلسطینیوں کی وہی لاشیں تھیں جنہیں اسرائیلی فوج نے قبروں سے نکال کر قبضے میں لیا تھا۔ اب یہ لاشیں یا ان کی باقیات منگل کے روز واپس آئیں تو انہیں از سر نو سپرد خاک کر دیا گیا۔

غزہ میں قائم فلسطینی وزارت صحت کے اہلکار اس موقع پر سفید لباس میں ملبوس تھے تاکہ اسرائیلی بمباری سے خود کو محفوظ رکھنے کی کوشش کر سکیں۔ انہوں نے ان لاشوں کو زمین پر ایک ایسی جگہ اتارا جہاں قریب ہی بے گھر فلسطینیوں کے کیمپ لگائے گئے تھے۔

تاہم اس بارے میں اسرائیلی فوج نے کوئی بھی تبصرہ نہیں کیا ہے ۔ البتہ اس سے پہلے اسرائیلی فوج نے تسلیم کیا تھا کہ اس نے اسرائیلی یرغمالیوں کی تلاش کے لیے یہ اقدام کیا تھا۔

اب فوج نے پیر کے روزکہا' یہ لاشوں کی شناخت کا عمل تھا جوایک محفوظ اور متبادل مقام پر کیا جاتا ہے، بہترین پیشہ ورانہ حالات اور مرنے والوں کے احترام کو یقینی بنایا جاتا ہے۔'

لیکن منگل کے روز ایک فوجی ترجمان نے اسرائیل کی جانب سے فلسطینیوں کی لاشوں کے اعضاء نکالنے کی خبروں کوبے بنیاد قرار دیا۔ اعضاء کے چوری کی خبریں حماس کے زیر انتظام غزہ میں سرکاری میڈیا آفس کی جانب سے سامنے لائی گئی تھیں۔

واضح رہے اب تک غزہ کی جنگ میں اسرائیلی بمباری سے تقریباً ستائیس ہزار فلسطینی ہلاک ہوچکے ہیں۔ ان ہلاک شدگان میں زیادہ تعداد عورتوں اور بچوں کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں