عراقی مسلح گروپوں کا اسرائیل کی حیفا بندرگاہ پر حملے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراقی مسلح گروپوں نے اسرائیل کی حیفا بندرگاہ پرحملے کا دعویٰ کیا ہے۔ یہ دعویٰ ایک ایسے وقت میں سامنےآیا ہے کہ جب عراق پچھلے مہینوں سے غزہ کی پٹی پر اسرائیل کی جنگ کے نتیجے میں خطے میں تنازعات میں توسیع کے بارے میں خبردار کر رہا ہے

گذشتہ برس اکتوبر سے عراقی مسلح دھڑوں کی طرف سے " اسلامی مزاحمتی اتحاد‘‘ کے نام سے سرگرم گروپوں کی طرف سے امریکی اور اسرائیلی مفادات پر حملے ہوئے ہیں۔ اس حوالے سے آج جمعرات کو ایک نئے حملے کے نفاذ کا اعلان کیا گیا ہے۔

عراقی مسلح گروپوں نے ایک مختصر بیان میں بتایا کہ انہوں نے اسرائیلی بندرگاہ حیفا کو ڈرون سے حملے کا نشانہ بنایا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ یہ حملہ غزہ میں جاری اسرائیلی کارروائیوں کا رد عمل ہے۔

منینا بندرگاہ
منینا بندرگاہ

پچھلے ہفتے ان دھڑوں نے اپنے حملوں کے دوسرے مرحلے کے آغاز کا اعلان کیا۔ اس وقت سید الشہداء بریگیڈز کے سیکرٹری جنرل ابو آلاء الولائی نے اپنے ایکس اکاؤنٹ پر ایک ٹویٹ میں زور دیا وہ اسرائیلی بندرگاہوں کو مفلوج کرنے کے لیے بحیرہ احمر میں جہازوں کو نشانہ بنائیں گے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ اس مرحلے میں اسرائیل کی سمندری نیویگیشن کا محاصرہ کرنا اور اس کی بندرگاہوں کو سروس سے باہر رکھنا"شامل ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں