اسرائیل کا جنوبی دمشق پر حملہ، پاسداران انقلاب کا مشیر ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایرانی نیوز ویب سائٹس کے مطابق دمشق میں پاسداران انقلاب کا ایک مشیر جمعہ کو اسرائیلی میزائل حملے میں مارا گیا۔

اس سے قبل شام کی سرکاری خبر رساں ایجنسی سانا نے شامی فوجی ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ شامی فوج نے جنوبی دمشق میں گولان کی پہاڑیوں سے داغے گئے متعدد اسرائیلی میزائلوں کو مار گرایا۔

ایرانی نیوز سائٹس نے ہلاک ہونے والے شخص کی شناخت سعید علیدادی کے نام سے کی ہے۔ انہوں نے اس شخص کے فوجی رینک کی نشاندہی نہیں کی۔

حملوں کے بارے میں پوچھے جانے پر اسرائیلی فوج نے کہا کہ اس کے پاس غیر ملکی میڈیا کی رپورٹوں پر کوئی تبصرہ نہیں ہے۔

غزہ سے فلسطینی عسکریت پسند گروپ حماس کے 7 اکتوبر کو اسرائیل پر حملے کے بعد سے، اسرائیل نے شام میں ایرانی حمایت یافتہ ملیشیا کے ٹھکانوں پر حملوں میں اضافہ کر رکھا ہے اور شامی فوج کو بھی نشانہ بنایا ہے۔

ذرائع نے خبر رساں ایجنسی رائٹرز کو بتایا ہے کہ ایرانی پاسداران انقلاب نے شام میں اپنے سینئر افسران کی تعیناتی کو کم کر دیا ہے کیونکہ تہران کو وسیع تر علاقائی تنازعے کے شروع ہونے کا خدشہ ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ پاسداران انقلاب پرانی حکمت عملی کی بجائے اتحادی شیعہ ملیشیا پر زیادہ بھروسہ کریں گے تاکہ شام میں اثر و رسوخ برقرار رکھا جائے۔

ایران کے صدر ابراہیم رئیسی نے جمعے کے روز ایک خطاب میں کہا کہ ان کا ملک خطے میں کوئی جنگ شروع نہیں کرے گا لیکن اس پر دھونس جمانے کی کوشش کا "سخت جواب" دیا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں