مصری صدر اور امریکی وزیر خارجہ کا غزہ میں جنگ بندی کی کوششوں پر تبادلہ خیال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصری صدر عبدالفتاح السیسی اور امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن نے غزہ کی پٹی میں جنگ بندی اور اسرائیل اور حماس کے درمیان قیدیوں کے تبادلے کی کوششوں پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

غزہ میں امدادی سامان داخل کرانے پر زور

مصری ایوان صدر کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا کہ صدر السیسی نے انٹونی بلنکن کے ساتھ بھی بات چیت کی اور ان کے دورہ قاہرہ کے دوران غزہ میں جنگ سے متاثرہ لوگوں تک ضروری امدادی امداد پہنچانے کی کوششوں پر بھی بات چیت کی۔

مصری صدر نے غزہ کو انسانی امداد کی فراہمی میں اقوام متحدہ کی ریلیف اینڈ ورکس ایجنسی برائے فلسطینی مہاجرین (UNRWA) کے "اہم کردار" کی اہمیت پر بھی زور دیا۔

بین الاقوامی قراردادوں پر عمل درآمد کی ضرورت

صدر السیسی نے "بحران سے متعلق بین الاقوامی اور اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عمل درآمد کی ضرورت پر زور دیا اور مسئلہ فلسطین کے منصفانہ اور جامع حل کے لیے سنجیدہ اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ تنازع فلسطین کے منصفانہ حل تک خطے میں پائیدار امن کا خواب پورا نہیں ہوسکتا۔

دوسری طرف امریکی وزیر نے مصر کے ساتھ ہم آہنگی اور مشترکہ کوششیں جاری رکھنے کے لیے اپنے ملک کی خواہش پر زور دیا۔

امریکی وزیر خارجہ نے دورہ مصر سے قبل ریاض میں سعودی عرب کے ولی عہد اور وزیراعظم شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز سے ملاقات کی۔

توقع ہے کہ وہ مصر کے بعد قطر کا دورہ کریں گے اور تل ابیب سے قیدیوں کی رہائی کے مذاکرات اور جنگ کے بعد غزہ سے متعلق منصوبوں پر بات چیت کریں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں