فلسطین اسرائیل تنازع

رفح: اسرائیلی جنگی منصوبے کا پھیلاؤ، جرمن وزیر خارجہ اسرائیل جائیں گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

جرمنی کی وزیر خارجہ 'اینا لینا بیئر باک' اس ہفتے کے وسط میں اسرائیلی دورے پر جائیں گی۔ یہ بات جرمن وزارت خارجہ کے ترجمان نے اتوار کے روز ایک بیان میں کہی ہے۔ ترجمان کے مطابق وزیر خارجہ کا دورہ غزہ مین جنگی وقفے کے لیے ہے جب اسرائیل رفح میں جنگ پھیلانے کے منصوبہ بنا رہا ہے۔

اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاہو اس بارے میں کہہ چکے ہیں کہ کہ ان کی حکومت دس لاکھ سے زائد فلسطینی پناہ گزین عوام کے رفح سے انخلاء کے لیے منصوبہ تیار کر رہی ہے ۔ یاد رہے رفح شہر مصری سرحد سے متصل ہے۔

سات اکتوبر 2023 سے جاری جنگ کے دوران پہلے اسرائیل اور اس کی فوج نے ان فلسطینیوں کو شمالی وسطی غزہ سے بے گھر کرکے رفح کی طرف دھکیلا تھا۔ اب اسرائیل نے انہیں دوباہ نقل مکانی پر مجبور کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔

جرمن وزیر خارجہ 'اینا لینا بیئر باک' نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ' ایکس' پر اس بارے میں لکھا ہے' رفح میں نقل مکانی کر کے جنگ اور تباہی سے بچنے کے لیے آنے والے 13 لاکھ فلسطینیوں کی تکالیف یقین اور تصور سے بھی کہیں زیادہ ہیں، اب اسرائیلی فوج کی طرف سے رفح میں ایک جارحیت انسانی تباہی کا سبب بنے گی۔ '

' ایکس' پر انہوں نے اس بارے میں مزید لکھا ' اسرائیل کو حماس سے اپنا دفاع ضرور کرنا چاہیے مگر اسے یہ بھی دیکھنا چاہیے کہ اس دوران عام لوگوں کی مشکلات میں اضافے کے بجائے کمی ہو، اسی غرض کے لیے غزہ میں جاری جنگ میں وقفہ کیا جانا ضروری ہے۔ جنگ میں وقفہ اسرائیلی یرغمالیوں کی رہائی کے لیے بھی ضروری ہے، میں اسرائیل کے دورے میں دوبارہ یہ بات کروں گی۔'

واضح رہے سات اکتوبر سے اب تک غزہ میں جاری جنگ کے نتیجے میں فلسطینیوں کی ہلاکتیں 28 ہزار سے زیادہ ہو چکی ہیں۔ ان میں 70 فیصد سے زیادہ فلسطینیوں کی بچے اور اور عورتیں ہلاک ہوئی ہیں۔ اب 23 لاکھ نقل مکانی کرنے والوں میں سے 13 لاکھ نقل مکانی کرکے رفح پہنچنے والوں کو ان کی اس عارضی پناہ گاہ سے بھی محروم کیے جانے کی تیاری کی جارہی ہے۔

وزیر خارجہ جرمنی ' اینا لینا بیئر باک ' سات اکتوبر 2023 کے بعد سے اسرائیلی جنگی کے تناظر میں چار پر اسرائیلی دورے پر آچکی ہیں اب وہ پانچویں مرتبہ اسرائیل جارہی ہیں۔ اس سے چند روز پہلے امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن بھی اپنا پانچواں دورہ مکمل کر کے واپس گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں