لبنان میں حزب اللہ کا ذمہ دار اسرائیلی حملے میں شدید زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

لبنانی عسکری ملیشیا حزب اللہ کا مقامی اہلکار پیر کے روز اسرائیلی حملے میں شدید زخمی ہو گیا ہے۔ اسرائیلی فوج نے پیر کے روز اس اہلکار کو اس وقت نشانہ بنایا جب وہ اپنی گاڑی پر سوار ہو کر جارہا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج نے حزب اللہ کے اس زمہ دار کو لبنانی شہر بنت جبیل نامی شہر میں نشانہ بنایا ہے۔ جس کے نتیجے میں یہ شدید زخمی ہو گیا۔ لبنان کی سرکاری خبر ایجنسی کے مطابق اس کارروائی کو اسرائیلی فوج نے ڈرون حملے سے ممکن بنایا ہے۔ یہ واقعہ جنوبی لبنان میں پیش آیا ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے اے ایف پی سے وابستہ ایک صحافی کا کہنا ہے حملے کا نشانہ بننے والی گاڑی کو تباہ حال دیکھا ہے۔ گاڑی کی چھت اڑ چکی تھی۔

ہفتے کے روز حماس کے ذمہ دار باصل صالح اسرائیل کے ایک حملے میں بچ گئے ہیں۔ یہ ڈرون حملہ سرحدی ٹاؤن حولہ میں ہوا۔ جبکہ اسی واقعے میں دو دوسرے اہلکار ہلاک ہو گئے تھے۔

واضح رہے حزب اللہ سات اکتوبر کے بعد سے لبنانی ملیشیا حزب اللہ اور اسرائیل کے درمیان لبان اسرائیل سرحد پر باہمی حملے جاری ہیں۔ اسرائیل نے اس دوران ڈرونز کی مدد سے لبنان کے اندر تک حملے شروع کر رکھے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں