حسن نصراللہ کی رہائشیوں سے اسرائیل کی جنگ کےدوران انٹرنیٹ کا استعمال بند کرنے کی اپیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

حزب اللہ کے حسن نصر اللہ نے پیر کے روز اسرائیل کے ساتھ لبنان کی سرحد کے قریبی رہائشیوں سے مطالبہ کیا کہ وہ غیر متعینہ مدت کے لیے انٹرنیٹ کے استعمال کی قربانی دیں کیونکہ اسرائیلی حملوں میں گروپ کے مزاحمت کاروں اور بلیو لائن (لبنان کو اسرائیل سے الگ کرنے والی لکیر) کے ساتھ رہنے والے شہریوں کو بہت زیادہ نقصان پہنچا ہے۔

نصراللہ نے غزہ جنگ اور ایران کے حمایت یافتہ گروپ کی اسرائیل کے ساتھ سرحد پار جھڑپوں کو روکنے کے لیے بین الاقوامی کوششوں پر بات کرنے کی غرض سے ایک ٹیلی ویژن تقریر میں کہا، "آپ کا فون ان کا ایجنٹ ہے۔"

تازہ ترین اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ فرانس نے لبنان کو ایک تجویز پیش کی ہے جس کے تحت حزب اللہ کے جنگجو سرحد سے ہٹ جائیں گے اور ان کی جگہ لبنانی مسلح افواج کے فوجی تعینات ہوں گے۔ مبینہ معاہدے کے دیگر حصوں میں حزب اللہ سرحد کے ساتھ اپنی چوکیوں کو بھی ختم کر دے گی۔

نصراللہ نے دعویٰ کیا کہ اب تک کی تجاویز لبنانی خدشات کو نظر انداز کرتے ہوئے اسرائیلی مفادات کو پورا کرتی نظر آتی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ "مغربی وفود کی تجاویز گویا ایسی ہیں کہ ہمیں (خالی وعدوں کے جواب میں) وقت سے پہلے ادائیگی کرنے کے لیے کہا جائے۔"

اسرائیل کہتا ہے کہ حزب اللہ کے ساتھ محاذ آرائی کے نتیجے میں شمال سے تقریباً 100,000 یا اس سے زیادہ باشندے اندرونی طور پر بے گھر ہو چکے ہیں۔

لیکن نصراللہ حزب اللہ کے حملوں کے آغاز سے ہی اس بات پر بضد ہیں کہ جب تک غزہ میں جنگ بندی نہیں ہو جاتی وہ باز نہیں آئیں گے۔

انہوں نے پیر کے روز متعدد تجاویز اور بیروت سے آنے جانے والے بین الاقوامی وفود کا حوالہ دیتے ہوئے کہا، "یہ محاذ صرف تب ہی رکے گا جب غزہ پر جارحیت ختم ہو گی۔"

اسرائیلی حکام کی دھمکیوں کہ وہ لبنان کے خلاف ہمہ گیر جنگ شروع کر دیں گے، کا جواب دیتے ہوئے نصراللہ نے "صرف 100,000 نہیں" بلکہ شمال سے بیس لاکھ کو بے گھر کرنے کی دھمکی دی۔

انہوں نے مزید کہا: "آپ پھیلیں تو ہم بھی پھیلیں گے۔ آپ کشیدگی میں اضافہ کریں تو ہم بھی کریں گے۔ ہمیں کوئی مسئلہ نہیں۔"

جہاں تک اسرائیلی حملوں کا تعلق ہے جس میں اکتوبر سے لے کر اب تک حزب اللہ کے 200 کے قریب مزاحمت کار ہلاک ہو چکے ہیں، نصر اللہ نے زمین پر اسرائیلی جاسوسوں یا حزب اللہ میں ان کی دراندازی کے کردار کو کم اہم قرار دیا۔

نصراللہ نے جنوبی لبنان کے رہائشیوں کے ساتھ ساتھ حزب اللہ کے مزاحمت کاروں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا، "میں آپ سے اس عرصے کے دوران اپنے موبائل فونز کو ترک کر دینے کا مطالبہ کرتا ہوں کیونکہ یہ ایک مہلک ایجنٹ ہے۔" سیل فون استعمال کرنے سے گریز کرنے کے علاوہ نصراللہ نے جنوب میں دکانوں اور رہائشیوں پر زور دیا کہ وہ انٹرنیٹ سے منسلک نگرانی کے تمام کیمرے بند کر دیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں