اسرائیلی بس سٹاپ پر فائرنگ ، دو اسرائیلی ہلاک چار زخمی، حملہ آور بھی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیل کے جنوبی قصبے کریات مالاخی میں فائرنگ سے دو افراد ہلاک ہو گئے۔ بندوق بردار نے اس وقت فائرنگ کر دی جب ایک بس سٹاپ پر لوگوں کا ایک ہجوم کھڑا تھا۔ اسرائیلی پولیس اور ہسپتال کے حکام نے دونوں ہلاکتوں کی تصدیق کر دی ہے۔

فائرنگ کے بعد جائے وقوعہ سے دو افرد کو کاپلان میڈیکل سنٹر لایا گیا۔ لیکن ہسپتال پہنچنے تک ان کی موت واقع ہو چکی تھی۔

سنٹر کے ترجمان نے بین الاقوامی خبر رساں ادارے 'اے ایف پی' کو بتایا ہے کہ ہسپتال میں جائے وقعہ سے لائے گئے چار افراد زیر علاج ہیں، جو ان کے دو ہلاک شدگان کے علاوہ تھے۔

پولیس نے بھی ہجوم پر فائرنگ کے اس واقعے میں دو ہلاکتوں کے علاوہ چار افراد کے زخمی ہونے کی تصدیق کی ہے۔

جائے وقوعہ کا دورہ کرنے والے 'اے ایف پی' کے فوٹو گرافر نے رپورٹ کیا ہے کہ حملہ آور کو بھی اسی وقت گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا۔ جمعہ کے روز کیرات مالاخی کے جس علاقے میں یہ واقعہ پیش آیا ہے یہ غزہ سے 25 کلو میٹر کے فاصلے شمال میں واقع ہے۔

پولیس نے اس حملہ آور کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا ایک سویلین نے حملہ آور کو ادھر ہی 'نیوٹرل' کر دیا تھا۔ پولیس چیف کوبی شیبتائی نے رپورٹرز کو تفصیلات بتائے بغیر بتایا 'ہم نے اس واقعے کے بعد قومی سطح پر 'الرٹ' جاری کر دیا ہے۔ '

واضح رہے اتوار کی شام بھی دو دہشت گردی کے دو واقعات ہوئے تھے، جس میں باوردی لوگوں کو نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی۔ ایک واقعہ بیت المقدس میں پیش آیا جہاں پولیس کو نشانہ بنایا گیا اور دوسرا واقعہ ایک چیک پوائنٹ پر فوجیوں کو نشانہ بناے کا پیش آیا۔ تاہم دونوں واقعات میں حملہ اوروں کو ہلاک کر دیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں