البغدادی کی اہلیہ نے داعش کے سربراہ سے آخری ملاقات کی تفصیلات بتا دیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

العربیہ اور الحدث کے ذریعے نشر کیے گئے ایک خصوصی انٹرویو میں داعش کے سربراہ ابوبکر البغدادی کی اہلیہ اسماء محمد نے 2014ء سے لے کر ایک امریکی حملے میں اس کی موت تک کے عرصے میں دنیا کے خطرناک ترین شخص کے بارے میں تفصیلات اور راز افشا کیے ہیں۔البغدادی کو شمال مغربی شام میں 2019ء میں آپریشن میں ہلاک کردیا گیا تھا۔

"اس نے ہمیں آخری منزل نہیں بتائی"

اسماء محمد نے اپنے شوہر ابوبکر البغدادی کے ساتھ اپنی آخری ملاقات کی تفصیلات کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ "البوکمال میں تنظیم کے ٹھکانوں کو ایک پرتشدد روسی حملے کا نشانہ بنائے جانے کے بعد داعش کے خاندانوں نے دریائے فرات کے دوسرے کنارے شعفہ کے علاقے میں نقل مکانی شروع کردی۔

اس نے مزید کہاکہ "اس وقت میں البغدادی سے کچھ عرصے سے نہیں ملی تھی۔ اس سفر میں ہم اس کے بھائی کے گھر گئے اور البغدادی وہاں ہمارے پاس آیا۔ اس نے ہمیں یہ نہیں بتایا کہ ہمیں ترکیہ بھیج دیا جائے گا لیکن انہوں نے کہا کہ ہم ادلب جائیں گے۔

ادلب میں ایک ماہ

اسماء محمد کہا کہ"جب ہم ادلب پہنچے تو پروگرام بدل گیا۔ اس کا فیصلہ ترکیہ کے لیے ہمارا آخری اخراج تھا۔ ادلب کے سفر میں 6 مشکل دن لگے۔ داعش کے رہ نما کا خاندان ایک ماہ تک وہاں رہا۔

آخری ملاقات

اس نے نشاندہی کی کہ اس نے ادلب میں ہمارے ساتھ صرف ایک رات گذاری اور یہ آخری ملاقات تھی۔ میں اس کے ساتھ اکیلے نہیں بیٹھی"۔

دریں اثنا عراق میں اس وقت زیر حراست بیوی نے داعش کے رہ نما کے کچھ راز افشا کرتے ہوئے کہا کہ وہ 10 سے زائد یزیدی "غلام" کا مالک تھا۔

"بغدادی نے بچی سے شادی کی"

اس نے نشاندہی کی کہ البغدادی نے ایک عراقی بچی سے شادی کی جس کی عمر بمشکل 13 سال تھی۔ وہ اس کی بیٹیوں کے برابر ہے۔

1999 میں البغدادی کی بیوی بننے والی اسماء نے اپنے انٹرویو میں انکشاف کیا کہ ان کے شوہر کو امریکی فورسز نے 2004 میں بغیر کسی وجہ کے گرفتار کیا تھا۔

قابل ذکر ہے کہ داعش کے رہ نما نے 2014 میں عراق اور شام کے بڑے علاقوں پر کنٹرول حاصل کرکے اس پر اپنی مزعومہ خلافت قائم کی تھی۔ اکتوبر 2019ء میں ادلب گورنری میں امریکہ کی جانب سے خصوصی آپریشن میں البغدادی کی ہلاکت س اس کی خلافت بھی ختم ہوگئی۔ اس وقت امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اعلان کیا تھا کہ امریکی افواج کے ایک کمانڈو اسکواڈ نے البغدادی کو دیکھا اور اس کا تعاقب کیا لیکن البغدادی نے اپنی دو بیویوں اور بیٹے کے ساتھ خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں