جنوبی لبنان پر اسرائیلی حملوں میں حزب اللہ اور امل کے 5 ارکان مارے گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ایک ایسے وقت میں جب اسرائیل اور لبنان سرحد پر حملوں کے تبادلے سے ،غزہ میں جنگ کے پس منظر میں کشیدگی کا دائرہ وسیع ہونے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے، جمعرات اور جمعہ کی درمیانی شب جنوبی لبنان پر اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں مزید 5 افراد ہلاک ہو گئے۔ ان کا تعلق حزب اللہ اور اس کی اتحادی امل موومنٹ سے تھا۔

دونوں گروپوں نے اس کی تصدیق کی۔

قومی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اسرائیلی طیاروں نے آدھی رات کے بعد ناقورہ، جبل البونہ، علما الشعب، اور دیگر قصبوں میں گھروں پر حملے کیے جس سے املاک اور فصلوں کو "شدید نقصان" پہنچا۔

قنطرہ قصبے میں ایک گھر پر حملہ کیا گیا جس کے نتیجے میں 3 افراد مارے گئے، جن کا تعلق امل موومنٹ تھا۔

ایجنسی فرانس پریس کے مطابق، ان کی موت کے اگلے دن، حزب اللہ نے صبح اپنے دو ارکان کے قتل کا اعلان کیا۔

بڑا اضافہ

قابل ذکر ہے کہ جنوبی لبنان اور شمالی اسرائیل میں بدھ کے روز ایک بڑی شدت دیکھنے میں آئی، اسرائیل نے کئی قصبوں پر فضائی حملوں کا سلسلہ شروع کیا، جن میں سے ایک میں، سرحد سے تقریباً 25 کلومیٹر کے فاصلے پر ایک اسرائیلی فوجی کی ہلاکت کے فوراً بعد ایک میزائل جنوبی لبنان پر داغا گیا۔

بدھ کے روز، حملوںکے نتیجے میں 15 افراد مارے گئے، جن میں کم از کم 10 عام شہری بھی شامل تھے، جن میں سے 7 کا تعلق ایک خاندان سے تھا، اس حملے میں جس نے نبیتیہ شہر کو نشانہ بنایا۔ اسی حملے میں حزب اللہ کے 3 ارکان مارے گئے جن میں سے ایک کو اسرائیلی فوج نے حزب اللہ کی رضوان فورسز کا کمانڈر پیش کیا۔

دریں اثنا، حزب اللہ نے جمعرات کی رات اعلان کیا کہ اس نے "شہریوں کی ہلاکت کے جواب میں،" شمالی اسرائیل کو درجنوں میزائلوں سے نشانہ بنایا۔

جب سے حزب اللہ اور اسرائیل نے سرحد پار سے بمباری کا تبادلہ شروع کیا ہے بدھ کو ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد ایک دن میں سب سے زیادہ ہے۔

268 مارے گئے

قابل ذکر ہے کہ ایجنسی فرانس پریس کے مرتب کردہ اعداد و شمار کے مطابق، دونوں فریقوں کے درمیان جھڑپوں کے آغاز سے لے کر اب تک جنوبی لبنان میں 268 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جن میں حزب اللہ کے 187 ارکان اور 40 عام شہری شامل ہیں جن میں 3 صحافی بھی شامل ہیں،

اسرائیلی جانب سے، فوج نے 10 فوجیوں اور 6 شہریوں کی ہلاکتوں کی تصدیق کی۔

غزہ میں جاری جنگ جو کہ اپنے پانچویں مہینے میں داخل ہو چکی ہے، ایک وسیع تر تنازعے کو پھوٹنے سے روکنے اور لبنان اور اسرائیل کے درمیان سرحدی صورتحال کو منظم کرنے کے لیے بین الاقوامی کوششیں تیز ہو رہی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں