فلسطین اسرائیل تنازع

حماس نے اسرائیلی یرغمالیوں کو ادویات فراہم کردیں: ترجمان وزارت خارجہ قطر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حماس نے اس امر کی تصدیق کی ہے کہ اسرائیلی یرغمالیوں کے علاج معالجے کے لیے اسے ادویات موصول ہو گئی ہیں۔ یرغمالیوں کے لیے ادویات کی یہ ترسیل حماس کے ساتھ ایک معاہدے کے تحت ممکن ہوئی ہے۔

قطری حکام اور فرانس نے اس سلسلے میں کلیدی کرادار ادا کیا تاکہ انسانی بنیادوں پر اسرائیلی یرغمالیوں کو غزہ میں علاج ممکن ہو سکے۔ قطری وزارت خارجہ کے ترجمان نے منگل کے روز یرغمالیوں کے لیے ادویات کی حماس کو موصولی کی اطلاع دی یے۔ ترجمان کے مطابق حماس کی طرف سے بھی تصدیق کر دی گئی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ پچھلے ماہ قطر اور فرانس نے مل کر حماس کو ایک ایسے معاہدے پر تیار کیا تھا جس کا مقصد غزہ میں موجود اسرائیلی یرغمالیوں کو جلد سے جلد ادویات بھجوانا تھا تاکہ غزہ جہاں اسرائیل نے تقریباً تمام ہسپتالوں پر حملے کر کے اور ناکہ بندی کر کے ادویات کی ترسیل روک رکھی ہےکم از کم یرغمالیوں کو ادویات کی ترسیل ممکن ہو سکے۔

یہ معاہدہ انسانی بنیادوں پر حماس نے قبول کر لیا۔ اب منگل کے روز ادویات کی یرغمالیوں تک ترسیل کی قطری وزارت خارجہ کے ترجمان ماجد الانصاری نے باضابطہ تصدیق کی بھی کر دی ہے۔ واضح رہے یرغمالیوں کو ادویات کی فراہمی کے ساتھ ساتھ غزہ میں امدادی سامان کی فراہمی میں رکاوٹ معطل کرنے کا عبوری فیصلہ اسرائیل نے بھی کیا تھا۔

غزہ جہاں اسرائیلی بمباری سے اب تک 29 ہزار سے زائد فلسطبینی ہلاک ہو چکے اور ستر ہزار کے قریب زخمی ہیں۔ اس میں زخمیوں اور مریضوں کے لیے اسرائیلی بمباری اور ناکہ بندی کے سبب ایک ہسپتال بھی طبی سہولیات فراہم کرنے کی پوزیشن میں نہیں رہ گیا ہے۔ آئے روز اسرائیلی فوجی ان ہسپتالوں پر حملے کرتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں