یوم تاسیس پر ایک سعودی نے اپنے گھر کو ثقافتی عجائب گھر میں بدل دیا

محمد النہیو کا گھر الخرج شہر میں واقع ہے اور زائرین کے لیے ایک مقبول مقام بن گیا ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے یوم تاسیس پر ایک شہری نے اپنے گھر کو ثقافتی میوزیم میں تبدیل کرکے سیاحوں کے لیے کھول دیا۔ میوزیم شاہ عبدالعزیز کے فون سمیت 150 پرانے فونز اور نایاب ثقافتی اور تاریخی اشیاء پر مشتمل ہے۔

یہ گھر، جو کہ 48 سال سے زیادہ پرانا ہے اور الخرج شہر وسطی سعودی عرب میں واقع ہے ۔

ہیریٹیج سے محبت کرنے والے اور میوزیم کے مالک محمد النہیو نے کہا: "میں نے نایاب ٹکڑوں اور کلاسک فن پاروں کو حاصل کیا، اور میں اپنے گھر کو ثقافتی ورثہ کی سہولت میں تبدیل کرنے کا خواہشمند تھا۔ میوزیم میں 14 کمروں کو کئی کیٹیگریز میں تقسیم کیا گیا ہے، جن میں ایک کافی کارنر بھی شامل ہے۔ جس میں سعودی کافی کی تاریخ سے متعلق اشیاء ہیں۔

میوزیم میں پرانی دکان سمیت متعدد گوشے بھی شامل ہیں، جن میں پرانی کھانے کی اشیاء شامل ہیں جو ماضی میں فروخت ہوتی تھیں، جیسے کہ مٹھائیاں اور بسکٹ۔ باقی گوشوں میں دلہن کا کمرہ شامل ہے، جس میں ماضی میں نوبیاہتا جوڑے کا سامان، اور پرانا باورچی خانہ جس میں کھانا پکانے کے پرانے برتن ہیں، کاریگروں کے گوشہ میں کسان، بڑھئی اور لوہار وغیرہ کے اوزار رکھے ہیں جو ماضی میں استعمال ہوتے تھے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے میوزیم کے دورے کے دوران تمام گوشوں کے تنوع اور سیاحوں کی آمد کا مشاہدہ کیا۔ یہ جگہ ماضی کی بہت سی یادیں رکھتی ہے، اور ہمیں قدیم دور کے خوبصورت دور میں لے جاتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں