اسرائیلی بمباری میں حزب اللہ کا ایک جنگجو اور طبی عملے کے دو کارکن ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنانی حزب اللہ گروپ نے جمعہ کے روز اعلان کیا ہے کہ جنوبی لبنان پر اسرائیلی حملوں کے نتیجے میں اس کا ایک رکن اور طبی عملے کے دو کارکن ہلاک ہو گئے۔

حزب اللہ نے اپنے ٹیلی گرام اکاؤنٹ پر کہا ہے کہ اس کے ایک رکن محمد حسن تراف کو ہلاک کر دیا گیا ہے۔اس کا تعلق جنوبی لبنان کے بلیدہ قصبے سے تھا۔ بیان میں مزید کہا کہ ہلاک ہونے والے دو پیرامیڈیکس محمد اسماعیل اور حسین خلیل کا تعلق بلیدہ اور برعشیت قصبوں سے تھا۔

ایک سکیورٹی ذرائع نے بتایا کہ یہ تینوں اسرائیلی بمباری میں مارے گئے جس میں جنوبی لبنان میں حزب اللہ سے وابستہ ایک شہری دفاع کے مرکز کو نشانہ بنایا گیا۔

دوسری جانب اسرائیلی فوج نے جمعرات کی شام کہا تھا کہ اس نے سرحد کے قریب بلیدہ قصبے میں حزب اللہ سے تعلق رکھنے والے جنگجوؤں کو "ایک فوجی عمارت میں داخل ہوتے دیکھا ۔ انہوں نے مزید کہا کہ "مانیٹرنگ کے بعد لڑاکا طیاروں کو الرٹ کیا گیا اور عمارت پر حملہ کیا"۔

حزب اللہ نے دو اسرائیلی فوجی مقامات پر بمباری کا جواب دیتے ہوئے حزب اللہ جنگجوؤں کو نشانہ بنایا۔

حزب اللہ کے "اسلامک ہیلتھ کمیش" کے شہری دفاع کے جنرل ڈائریکٹوریٹ نے ایک بیان میں اطلاع دی ہے کہ بلیدہ میں سول ڈیفنس سنٹر پر اسرائیل کی براہ راست بمباری میں اس کے دو ارکان مارے گئے۔

سکیورٹی ذرائع نے خبررساں ایجنسی ’اےایف پی‘ کو بتایا کہ جمعرات کی رات اسرائیلی حملے میں "بلیدہ قصبے میں ہیلتھ اتھارٹی کے ایک مرکز کو نشانہ بنایا گیا، جس میں تین افراد ہلاک اور ایک زخمی ہوا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں