بہرصورت شمال میں سیکورٹی بحال کریں گے: نیتن یاھو کا گولان پہنچ کر بیان

جنوبی لبنان میں ان مقامات کو نشانہ بنایا جہاں سے اسرائیل کی طرف میزائل داغے گئے تھے: اسرائیلی فوج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے شمالی گولان کا دورہ کیا اور اس دوران انہوں نے شمالی اسرائیل کی سکیورٹی کی بحالی پر زور دیا۔ نیتن یاہو نے کہا کہ ہم ہر طرح سے شمال میں سیکورٹی بحال کریں گے اور حزب اللہ کو اس کا احساس ہونا چاہیے۔

یہ بات اس وقت سامنے آئی ہے جب العربیہ اور الحدیث چینلز کے نامہ نگار نے جنوبی لبنان میں بلیدا قصبے پر اسرائیلی حملے کی اطلاع دی ہے۔ جنوبی لبنان میں نبطیحہ کے قریب کفر رمان کے علاقے میں ایک سقہ پر بھی حملہ کیا گیا۔ اسرائیلی فوج نے کہا کہ گزشتہ چند گھنٹوں کے دوران اس نے جنوبی لبنان میں ان مقامات کو نشانہ بنایا جہاں سے شمالی اسرائیل میں کریات شمونہ اور یوفال کے علاقوں کی طرف میزائل داغے گئے۔

فوج نے ایک بیان میں مزید کہا کہ اس کے جنگجوؤں نے مارون الراس کے علاقے میں حزب اللہ کے ایک فوجی کمپاؤنڈ اور کفر کلا اور خیام میں مسلح عناصر کے زیر استعمال انفراسٹرکچر پر بمباری کی۔ انہوں نے کہا کہ ان کے ایک ٹینک نے جنوبی لبنان میں جیبن کے علاقے میں خطرے کو دور کرنے کے لیے بھی فائرنگ کی۔

_بمباری کے بعد لبنان اسرائیل سرحد کے مناظر
_بمباری کے بعد لبنان اسرائیل سرحد کے مناظر

حزب اللہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ کہ اس کے جنگجوؤں نے کریات شمونہ بیرکوں میں ایک کمانڈ ہیڈ کوارٹرز کو مناسب ہتھیاروں سے نشانہ بنایا ہے۔ یروشلم پوسٹ اخبار نے اطلاع دی ہے کہ شمالی اسرائیل میں ایک مکان کو لبنان سے فائر کیے جانے والے ٹینک شکن میزائل سے ٹکرانے کے بعد نقصان پہنچا ہے۔

8 اکتوبر سے اب تک اسرائیلی حملوں میں حزب اللہ کے تقریباً 200 جنگجوؤں کے علاوہ لبنان میں 50 کے قریب شہری مارے جا چکے ہیں۔ لبنان کے اندر سے اسرائیل پر ہونے والے حملوں میں 12 اسرائیلی فوجی اور 5 شہری ہلاک ہو چکے ہیں۔ سرحد کے دونوں طرف دسیوں ہزار افراد بے گھر ہوگئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں