وسطی غزہ میں اسرائیلی بمباری سے کم از کم 23 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

غزہ کی پٹی میں وزارتِ صحت نے ایک بیان میں کہا کہ جمعرات کو وسطی غزہ میں گھروں پر اسرائیلی بمباری میں کم از کم 23 فلسطینی جاں بحق ہو گئے۔

وزارتِ صحت نے قبل ازیں کہا تھا کہ غزہ میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 97 سے زائد افراد ہلاک ہوئے جبکہ امریکی ایلچی جنگ بندی کی تازہ کوششوں کے لیے اسرائیل میں تھے۔

اسرائیل کے خلاف حماس کے سات اکتوبر کے حملے کے بعد جوابی اسرائیلی کارروائی میں اس علاقے میں شہریوں کی بڑھتی ہوئی ہلاکتوں اور جنگ سے پیدا شدہ مایوس کن انسانی بحران پر بین الاقوامی تشویش بڑھ گئی ہے۔

شرقِ اوسط اور شمالی افریقہ کے لیے وائٹ ہاؤس کے رابطہ کار بریٹ میک گرک نے قاہرہ میں دیگر ثالثین کے ساتھ ملاقات کے بعد تل ابیب میں اسرائیلی وزیرِ دفاع یوو گیلنٹ سے بات چیت کی۔

حماس گروپ نے بتایا کہ ان کے سربراہ اسماعیل ہنیہ اس ہفتے کے شروع میں جنگ بندی مذاکرات کے لیے مصر کے دارالحکومت میں تھے۔

امریکہ، قطر اور مصر سمیت ثالثین نے کوشش کی ہے اور اب تک جنگ بندی اور یرغمالیوں کی رہائی کے معاہدے میں ثالثی کرنے میں ناکام رہے ہیں لیکن اس ہفتے جمود کو توڑنے کے لیے ایک نیا دباؤ ڈال رہے ہیں۔

اسرائیلی وزارتِ دفاع نے کہا کہ میک گرک کے ساتھ بات چیت میں یرغمالیوں کی واپسی، "وسطی اور جنوبی غزہ میں حماس کے مضبوط ٹھکانوں میں آپریشنل پیشرفت اور انسانی امداد کی کوششوں" کے ساتھ ساتھ "حماس کی بقیہ بٹالین کو ختم کرنے کی اہمیت" کا احاطہ کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں