جنوبی لبنان میں کشیدگی جاری، اسرائیل کی حزب اللہ کے ٹھکانوں پر بمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے آج ہفتے کے روز کہا ہے کہ اس کے جنگی طیاروں نے جنوبی لبنان میں جبل بلاط کے علاقے میں حزب اللہ کی فائرنگ کے مقامات اور بنیادی ڈھانچے پر بمباری کی۔

فوج نے ایک بیان میں مزید کہا کہ اس نے عیتا الشعب کے علاقے میں حزب اللہ کے ایک مانیٹرنگ سینٹرپر بھی بمباری کی، جب کہ اسرائیلی توپ خانے نے جنوبی لبنان کے علاقے حانین اور مروحین کے علاقوں میں "خطرے کے مقامات پر گولہ باری کی۔

اس سے قبل آج اسرائیلی فوج نے شمالی اسرائیل کے قصبے ادمیت میں سائرن بجانے کا اعلان کیا تاہم کسی حملے میں نقصانات کی تفصیلات سامنے نہیں آئیں۔

لبنانی میڈیا نے جمعے کی شام کو اطلاع دی کہ اسرائیل نے رمیہ قصبے کے مضافات اور جنوبی لبنان میں کوہ بلاط کی بلندیوں پر تین فضائی حملے کیے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ جنوبی لبنان میں صیدا کے قرب و جوار میں ایک زبردست دھماکے کی آواز سنی گئی۔

7 اکتوبر کو حماس کی طرف سے اسرائیل پر شروع کیے گئے غیر معمولی حملے کے ایک دن کے بعد سے لبنان کی سرحد پر حزب اللہ اور اسرائیل کے درمیان کشیدگی میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

جنوبی لبنان اور شمالی اسرائیل کی سرحد پر 14 فروری کو بڑی کشیدگی کا مشاہدہ کیا گیا جس میں حزب اللہ کے پانچ عناصر سمیت کم سے کم دس افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔

کشیدگی کے آغاز سے لے کر اب تک لبنان میں 276 افراد ہلاک ہو چکے ہیں، جن میں حزب اللہ کے 191 ارکان اور 44 عام شہری شامل ہیں۔

اسرائیل میں فوج نے دس فوجیوں اور چھ عام شہریوں کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں