رمضان میں سیز فائر نہ ہوا تو غزہ کی جنگ پھیل جائے گی: شاہ عبداللہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اردن کے شاہ عبداللہ نے خبر دار کیا ہے کہ اگر اسرائیل نے غزہ میں رمضان میں بھی جنگ بندی نہ کی توجنگ کا دائرہ علاقے کی سطح پر پھیل جائے گا۔

ان کا یہ تازہ بیان غزہ میں تقریباً پانچ ماہ کی جنگ میں 30 ہزار فلسطینیوں کے قتل کے تناظر میں آیا ہے۔ شاہ عبداللہ کے اس بیان سے پہلے ان کی فلسطینی اتھارٹی کے صدر محمود عباس سے ملاقات بھی ہوئی ہے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق شاہ عبداللہ کا کہنا تھا 'اگر اسرائیل نےمسلمانوں کے مقدس مہینے رمضان کے دوران بھی غزہ میں جنگ جاری رکھی اور فلسطینیوں کا قتل عام جاری رکھا گیا تو یہ جنگ علاقے بھر میں پھیل جانے کا خطرہ ہو گا۔'

دوسری جانب اسرائیل نے انتباہ کر رکھا ہے کہ اگر ایرانی حمایت یافتہ حماس نے رمضان سے قبل اسرائیلی یرغمالی رہا نہ کیے تو رمضان میں بھی جنگ جاری رہے گی۔ نیز جنگ 14 لاکھ پناہ گزینوں کا مرکز بن چکے رفح شہر میں بھی منتقل کر دی جائے گی۔'

خیال رہے رمضان المبارک کا آغاز امکانی طور پر دس یا گیارہ مارچ سے ہو گا۔ رمضان کی آمد سے قبل یرغمالیوں کی رہائی اور جنگ بندی کے لیے مذاکرتی عمل تیز کیا جا چکا ہے۔ پیرس کے بعد اب چالث ملکوں کے نمائندوں کا مذاکراتی مشن دوحہ میں جاری رہے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں