فلسطین اسرائیل تنازع

نئی فلسطینی حکومت غیر جماعتی ہو گی: تحریک فتح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

فلسطینی وزیراعظم محمد اشتیہ کی طرف سے اپنا استعفیٰ صدر محمود عباس کو پیش کرنے کے بعد تحریک فتح نے واضح کیا ہے کہ آئندہ کوئی بھی حکومت غیر جماعتی ہو گی۔

فتح کے ترجمان عبدالفتاح دولہ نے پیر کے روز العربیہ کو بتایا کہ اگر اسرائیلی محاصرہ جاری رہا تو کوئی بھی حکومت اپنا کردار ادا نہیں کر سکے گی۔

انہوں نے یہ بھی زور دیا کہ "اگلی حکومت دھڑوں پر نہیں بلکہ اہلیت پر مشتمل ہو گی"۔

"محمود عباس کےجواب کا انتظار"

انہوں نے وضاحت کی کہ وزیراعظم محمد اشتیہ حکومت اسرائیلی مالیاتی ناکہ بندی کا شکار ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان کی جماعت موجودہ حکومت کے استعفے کو قبول کرنے کے بارے میں محمود عباس کے موقف کی منتظر ہے۔

انہوں نے زور دے کر کہا کہ اگلا مرحلہ مشکل ہے اور غزہ کی پٹی کو ریلیف فراہم کرنے کے لیے قومی اتفاق رائے کی ضرورت ہے۔

یہ بات فلسطینی وزیر اعظم کی طرف سے اس بات کی تصدیق کے بعد سامنے آئی ہے کہ اگلے مرحلے کے لیے غزہ میں نئے حکومتی اور سیاسی انتظامات کی ضرورت ہے جو نئی حقیقت کو مدنظر رکھیں۔ انہوں نے کابینہ کے اجلاس میں اپنا استعفیٰ پیش کرتے ہوئے کہا کہ گلے مرحلے اور اس کے چیلنجوں کے لیے نئے حکومتی اور سیاسی انتظامات کی ضرورت ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں