عرب پارلیمنٹ کی الاقصیٰ کی مغربی دیوار پر واچ ٹاور تعمیر کرنے پر اسرائیل کی مذمت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

عرب پارلیمنٹ نے اسرائیلی حکام کی جانب سے مسجدِ اقصیٰ کی مغربی دیوار پر فوجی واچ ٹاور کی تعمیر اور نگرانی کے لیے کیمروں کی تنصیب کی مذمت کی ہے۔

اس نے اسرائیل کو ایسے طریقوں کے نتائج کا ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس نے "دنیا بھر کے مسلمانوں کو مشتعل کرنے اور فلسطینی عوام کے خلاف جاری جارحیت کے دائرے کو وسعت دینے کی تمام حدیں عبور کر لی ہیں۔"

اس نے مزید کہا ہے کہ "غزہ میں نسل کشی کی جنگ اور نسلی تطہیر کی روشنی میں قبضے کے اقدامات غلط، ناجائز، غیر قانونی اور بین الاقوامی قانون اور اقوامِ متحدہ اور یونیسکو کی قراردادوں کی صریح خلاف ورزی ہیں"۔

تنظیم نے کہا، "اسرائیلی قبضے کا مقصد مقبوضہ بیت المقدس اور اس کے مقدسات کی تاریخی، سیاسی، آبادیاتی اور قانونی حقیقت کو تبدیل کرنا اور فلسطینی عرب شناخت کو مٹانا ہے۔"

عرب پارلیمنٹ نے اسلام کے تیسرے مقدس ترین مقام پر اسرائیلی خلاف ورزیوں کو ختم کرنے اور "فلسطینی عوام کو نشانہ بنانے والی نسل کشی" کو روکنے کے لیے تمام اقدامات اٹھانے کی غرض سے فوری بین الاقوامی مداخلت کا مطالبہ کیا۔

فلسطینی خبر رساں ادارے وافا کے مطابق اتوار کے روز اسرائیلی افواج نے مسجد کی مغربی دیوار پر بنائے گئے پہرے کے مینار پر نگرانی کے لیے کیمرے نصب کر دیئے۔

فلسطینی وزارتِ خارجہ نے اس اقدام کی شدید مذمت کی ہے اور مسجد کے احاطے میں اسرائیلی افواج کی روزانہ کی دراندازی اور یروشلم کی تاریخی، سیاسی، آبادیاتی اور قانونی حقیقت کو تبدیل کرنے کی اسرائیلی کوششوں کی مذمت کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں