لبنان کی سرحد کے قریب اسرائیل میں میزائل گرنےسے ایک شخص ہلاک، سات زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

آج سوموار کے روز اسرائیلی طبی ماہرین نے اطلاع دی کہ لبنان کی سرحد کے قریب میزائل حملے میں ایک غیر ملکی کارکن ہلاک متعدد افراد زخمی ہوئے۔ یہ واقعہ ایک ایسے وقت میں پیش آیا ہے جب حزب اللہ اور اسرائیلی فوج کے درمیان تصادم پانچ ماہ سے جاری ہے۔

ایمبولینس سروسز نے ایک بیان میں کہا کہ ٹینک شکن میزائل نے "غیر ملکی کارکنوں کو جو ایک فارم پر کام کر رہے تھے" کو نشانہ بنایا۔ ان میں سے ایک ہلاک اور کم از کم سات دیگر زخمی ہوئے۔ میزائل کا ذریعہ فوری طور پر معلوم نہیں ہو سکا۔

گذشتہ رات حزب اللہ نے اعلان کیا کہ اس نے ایک اسرائیلی فورس کو میزائلوں سے نشانہ بنایا جب وہ جنوبی لبنان میں وادی قطمون کے علاقے میں دراندازی کی کوشش کر رہی تھی۔ انہوں نے ایک بیان میں مزید کہا کہ نشانہ بنانے کے نتیجے میں اسرائیلی فوج پر براہ راست حملہ ہوا جس یں اسرائیلی فوج کو جانی اورمالی نقصان پہنچا۔ تاہم اسرائیلی فوج کی طرف سے ایسے کسی واقعے کی تصدیق نہیں کی گئی۔

دوسری جانب ایک سینیر لبنانی اہلکار اور وائٹ ہاؤس کے ایک اہلکار نے اتوار کے روز کہا کہ امریکی ایلچی آموس ہاکسٹین پیر کو بیروت کا دورہ کریں گے تاکہ لبنان اور اسرائیل کے درمیان بڑھتی کشیدگی کو سفارتی طریقے سے حل کرسکیں۔

غزہ جنگ کے متوازی کئی مہینوں سے حزب اللہ اور اسرائیل کے درمیان جھڑپیں جاری ہیں۔ یہ لڑائی حزب اللہ اور اسرائیل کے درمیان 2006 کی جنگ کے بعد بدترین تصادم کی نمائندگی کرتی ہے، جس سے بڑے تصادم کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں