قطر اور عراق کا یو این ایجنسی ' اونروا' کو پچیس پچیس ملین ڈالر دینے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اقوام متحدہ میں قطری سفیر شیخہ عالیہ احمد بن سیف الثانی نے فلسطینی پناہ گزینوں کی مدد کے قائم ادارے ' اونروا' کو ہنگامی ضروریات پوری کرنے کے لیے اضافی 25 ملین ڈالر دینے کا اعلان کیا ہے۔ قطری خبر رساں ادارے کی طرف سے یہ اعلان بدھ کو رپورٹ کیا گیا ہے۔

دریں اثنا عراق نے بھی ' اونروا کے لیے 25 ملین ڈالر کا عطیہ پیش کرنے کا اعلان کیا ہے۔ یہ بات عراقی حکومت کے عہدے دار نے بین الاقوامی خبر رساں ادارے ' روئٹرز' کو بتائی ہے۔ تاہم ابھی یہ واضح نہیں ہے کہ عراق یہ رقم کب تک ادا کر دے گا۔

ناروے کے وزیر خارجہ نے اس سلسلے میں کہا ہے کہ کئی ملکوں نے ' اونروا ' کے لیے اپنی امداد معطل کر رکھی ہے۔ ہو سکتا ہے کہوہ دوبارہ اس بارے میں سوچیں اور امداد جلد بحال ہو جائے۔ واضح رہے کہ سات اکتوبر کے بعد سے 23 لاکھ کی تعداد میں بے گھر ہونے والے فلسطینی عوام کے لیے ریلیف کا کام کرنے والے ادارے کی امداد روکنے والوں میں امریکہ ، برطانیہ ،اور نیوزی لینڈ وغیرہ بھی شامل ہیں۔

ان ملکوں نے 'اونروا' کے غزہ میں بروئے کار 13000 کارکنوں میں سے 12 کارکنوں پر اسرائیل کے لگائے گئے الزام کی بنیاد پر ' اونروا' کی امداد روک رکھی ہے۔ اہم بات ہے کہ اسرائیلی الزام کے بعد کسی قسم کی تحقیقات سے پہلے ہی ' اونروا ' کو سزا دے دی گئی ہے۔

ناروے نے ' اونروا ' کے لیے ماہ فروری میں 26 ملین دالر کی امداد بحال رکھی تھی، نیز اعلان کیا تھا مزید امداد ملے گی۔ ناروے اس سلسلے میں دوسرے ملکوں کو بھی ' اونروا' کی امداد کے لیے قائل کر رہا ہے۔

نارویجن وزیر خارجہ نے کہا ' امید ہے کہ بڑی تعداد میں جن ملکوں نے ' اونروا' کی امداد روک رکھی ہے وہ جلد امداد بحالی کا سوچیں گے۔ تاکہ غزہ میں انسانی بنیادوں پر امدادی سرگرمیاں جاری رہ سکیں۔' وزیر خارجہ ناروے نے ان میں سے کسی ملک کا نام نہ لیا اور کہا امید ہے کہ کوئی آبرو مندانہ راستہ نکل آئے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں