مصری کا سابقہ بیوی سے انوکھا انتقام، خاندان اور وکیل کو زہر کھلا دی

ملزم نے سابقہ بیوی کے خاندان اور وکیل کو مہلک زہرملا کرپیسٹری تحفے میں بھیجی جسے کھانے سے سب کی حالت غیر، ہسپتال منتقل، ملزم گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصرمیں ایک شخص نے اپنی سابقہ بیوی،اس کے خاندان اور وکیل سے انوکھے طریقے سے انتقام لے کر سب کو حیران کردیا۔ شمالی مصرکی البحیرہ گورنری کے رشید سٹی سے تعلق رکھنے والے شخص نے اپنی مطلقہ بیوی کے خاندان اور اس کے وکیل کو ایک پیسٹری میں زہریلا مواد ملا کربھیجا۔

مصری حکام کو اطلاع ملی کہ ایک ہی خاندان کے متعدد افراد بیماری میں مبتلا ہونے کے بعد رشید ہسپتال پہنچے ہیں۔ ان میں سے بعض کی حالت تشویشناک ہے۔ معلوم کرنے پر پتا چلا کہ یہ تمام افراد ایک روایتی پیسٹری کھانے سے بیمار ہوئے ہیں۔ یہ پیسٹری ایک شخص کی طرف سے شہر کے ایک اسٹور کے ذریعے بھیجی گئی اور ساتھ ہی شادی کا دعوت نامہ بھی بھیجا گیا تھا۔

مصری سکیورٹی فورسزکی جانب سے کی گئی تحقیقات سے معلوم ہوا کہ خاندان کے ایک فرد کو ایک بیگ ملا جس میں پیسٹری کا ایک ڈبہ تھا اور ایک شادی کا ایک دعوتی کارڈ جس پراس کے رشتہ داروں کے نام لکھے ہوئے تھے موجود تھا۔ انہوں نے اسے کھولا تواس کے اندر سے ایک پیسٹری ملی۔ انہوں نے اسے کھایا اور کچھ ہی دیرکے بعد ان کی حالت خراب ہوگئی۔

تحقیقات اورنگرانی کے کیمروں سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ جس شخص نے زہرآلود تحفہ بھیجا تھا اس کا نام مسٹر’ع م‘ اوراس کی عمر 56 سال ہے۔ اس نے قانون میں گریجوایشن کیا ہے۔ اس نے خاندان کی ایک بیٹی سے طلاق لے لی تھی۔اس کے اوراس کی سابقہ بیوی جو جرمنی میں رہتی ہے کے درمیان اختلافات پیدا ہو گئے تھے۔ طلاق ہونے کے بعد اس شخص نے طلاق کا بدلہ لینے اوراس کے خاندان کو قتل کرنے کا فیصلہ کیا۔

تفتیش سے یہ بھی پتہ چلا کہ ملزم نے زہرآلود کنافہ [پیسٹری] کا ایک اورڈبہ اسی شہر میں رہائش پذیراپنی سابقہ بیوی کے وکیل کو بھیجا۔ ملزم کو جرمنی فرار ہونے کی کوشش سے قبل ہی گرفتار کر لیا گیا، جہاں اس نے واقعے کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ اس سے سابقہ بیوی ،اس کے خاندان اور وکیل سے بدلنہ لینے کے لیے یہ قدم اٹھایا تھا۔

استغاثہ نے ملزم پر 7 افراد کےاقدام قتل کے تحت فرد جرم عاید کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں