"میں اپنی بہنوں کے لیے کھانا چاہتا ہوں"۔ فلسطینی بچے کا سرحد پرمصری فوجیوں کو پیغام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سوشل نیٹ ورکنگ سائٹس پر غزہ کے ایک بچے کا انسانیت بالخصوص مصری فوج کے نام درد بھرا پیغام وائرل ہو رہا ہے۔ یہ پیغام ایک ویڈیو کی شکل میں ہے جس نے سوشل میڈیا پر دھوم مچا دی ہے۔

اس نے فلسطینی- مصری سرحد پر مصری فوجیوں کو لکھا کہ "مجھے اپنی بھوکی بہنوں کے لیے کھانا چاہیے"۔

مصری حکام نے غزہ کی پٹی میں امدادی ٹرکوں کولانے اور زخمی فلسطینی ساتھیوں اور غیر ملکی اور مصری پاسپورٹ رکھنے والوں کو وصول کرنے کے لیے شمالی سینائی میں رفح زمینی کراسنگ کھول دی ہے. اس کے علاوہ غزہ کی پٹی میں اقوام متحدہ اور یکجہتی کے وفود کے داخلے کی اجازت دی گئی ہے۔

غزہ کی پٹی میں مسلسل اسرائیلی بمباری اور بگڑتے ہوئے انسانی بحران کے دوران یورپی یونین اور امریکہ نے جمعہ کے روز قبرص اور غزہ کے درمیان ایک سمندری گذرگاہ کھولنے کا اعلان کیا ہے تاکہ محصور فلسطینی پٹی تک انسانی امداد پہنچایا جا سکے۔

یہ امریکی صدر جو بائیڈن کے سمندر کے ذریعے ایک بڑے انسانی آپریشن کا اعلان کرنے کے بعد سامنے آیا جس میں ان کی انتظامیہ کے حکام کے مطابق غزہ میں "بڑے پیمانے پر امداد" لانے کے لیے "عارضی بندرگاہ" کی تعمیر شامل ہے لیکن اس کی تکمیل میں کئی ہفتے لگ سکتے ہیں۔

دوسری جانب بائیڈن نے اسرائیل اور حماس کے درمیان رمضان کے مہینے میں عارضی جنگ بندی تک پہنچنے میں دشواری کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ یہ "مشکل لگتا ہے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں