حماس ارکان کی سمندر کے راستے اسرائیلی فوجی اڈے زیکیم میں دراندازی

غزہ پر اسرائیلی حملوں میں درجنوں فلسطینی شہید، مجموعی تعداد 31272 ہوگئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

فلسطینی میڈیا نے اطلاع دی ہے کہ حماس کے عسکری بازو عزالدین القسام بریگیڈز کے ارکان نے سمندر سے زیکیم فوجی اڈے پر دھاوا بول دیا۔ اس تناظر میں اسرائیلی فوج نے کہا ہے کہ ہم نے دراندازوں کو زیکیم فوجی اڈے کی طرف غوطہ لگاتے ہوئے دیکھا۔ حماس نے بے گھر ہونے والوں کی بتدریج واپسی اور غزہ میں جنگ بندی کی توسیع کے لیے بین الاقوامی پیشکش موصول ہونے سے انکار کیا ہے۔ حماس نے اس بات کی بھی تردید کی ہے کہ اس کا وفد ثالثوں سے اس پیشکش کی تفصیلات پر گفتگو کرنے قاھرہ جارہا ہے۔

تحریک حماس کے رہنما محمد نزال نے العربیہ اور الحدث کو بتایا کہ حماس اور اسرائیل کے درمیان مذاکرات جاری ہیں لیکن حماس کی جانب سے جنگ روکنے کے اصرار کی وجہ سے وہ ناکام ہو رہے ہیں۔

محمد نزال نے مزید کہا کہ اسرائیل عارضی جنگ بندی کے معاہدے کے حوالے سے جو کچھ تجویز کر رہا ہے حماس اسے مسترد کرتی ہے۔ غزہ کی پٹی میں اسرائیلی موجودگی بے گھر ہونیوالوں کو اپنے علاقوں میں واپس جانے اور امداد کی آمد روک رہی ہے۔

دوسری طرف اسرائیلی حکام نے کہا ہے حماس کے رہنماؤں کے موقف میں تبدیلی سے سنجیدہ مذاکرات کی طرف جایا جا سکتا ہے۔ انہوں نے کہا حماس کو احساس ہے کہ اسے اگلا قدم اٹھانا چاہیے۔ بیان میں اشارہ دیا گیا کہ اسرائیل یہ جاننے کے لیے حماس کے باضابطہ جواب کا انتظار کر رہا ہے کہ آیا وہ پیرس فریم ورک معاہدے کی بنیاد پر مزید سنجیدہ مذاکرات کی طرف جانے کے لیے تیار ہے۔

امریکی وزیر خارجہ بلنکن نے ’’ ایکس‘‘ پلیٹ فارم پر کہا کہ ان کا ملک غزہ کی پٹی میں قیدیوں کی رہائی کے معاہدے کے تحت کم از کم چھ ہفتوں کے لیے فوری اور پائیدار جنگ بندی کے لیے کام جاری رکھے گا۔ بلنکن نے مزید کہا امن ممکن ہے لیکن اس کے قیام کی فوری ضرورت ہے۔ امریکہ اس بات کو یقینی بنانے کے لیے کام کرتا رہے گا کہ امن اور عقیدہ کی آزادی تمام مسلمانوں اور دنیا بھر کے تمام لوگوں تک پہنچ جائے۔

واضح رہے غزہ کی پٹی میں 159 دن بھی اسرائیلی جارحیت جاری رہی۔ بدھ کی صبح ہی اسرائیلی نے فضائی بمباری اور توپ خانے سے گولہ باری شروع کردی۔ ان حملوں میں بچوں اور خواتین سمیت درجنوں فلسطینی شہید اور زخمی ہوگئے۔

جینن میں اسرائیل کی نئی دراندازی

فلسطینی خبر رساں ایجنسی نے بتایا ہے کہ غزہ شہر کے شمال میں واقع الدرج کالونی میں اسرائیلی فوج کی بمباری کے نتیجے میں 2 افراد جاں بحق اور 4 بچے زخمی ہوگئے۔ اسرائیلی طیاروں کی بمباری میں متعدد شہری جاں بحق ہوگئے۔

ادھر مغربی کنارے کے شہر جنین اور اس کے کیمپ پر اسرائیلی فوج کے نئے حملے میں دو افراد ہلاک اور چار زخمی ہو گئے۔ طبی ذرائع نے بتایا کہ دونوں مرنے والوں کی موت اسرائیلی گولیوں سے لگنے والے زخموں سے ہوئی۔

ایجنسی کے مطابق ایک اسرائیلی فوجی دستے نے خلیل سلیمان سرکاری ہسپتال کی طرف پیش قدمی کی اور ہسپتال کے ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ کے سامنے کھڑے شہریوں کے ایک گروپ پر براہ راست فائرنگ کردی۔ اسرائیلی فورسز نے آدھی رات کے بعد مغربی کنارے کے شہر جنین اور اس کے کیمپ پر دھاوا بولا۔

دریں اثنا اسرائیلی میگن ڈیوڈ ایڈوم ایمبولینس سروس نے کہا ہے کہ اسے مشرقی القدس کے علاقے میں سرنگ چیک پوائنٹ کے قریب چاقو کے حملے میں دو افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ملی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں