سعودی عرب میں غیر تیل کی مجموعی گھریلو پیداوار کا نیا ریکارڈ قائم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کی مملکت میں غیرتیل کی سرگرمیوں نے سال 2023ء کے دوران حقیقی جی ڈی پی میں اپنا سب سے زیادہ حصہ 50 فیصد ریکارڈ کیا، جو کہ یہ اب تک کی بلند ترین تاریخی سطح ہے۔ یہ تفصیلات وزارت اقتصادیات اور منصوبہ بندی کی جنرل اتھارٹی برائے شماریات کے جاری کردہ اعداد و شمار کے تجزیوں پر مبنی ہے۔

سرمایہ کاری کھپت اور برآمدات میں مسلسل نمو کی وجہ سے کل غیر تیل کی معیشت مستقل قیمتوں پر 1.7 کھرب ریال تک پہنچ گئی۔

تاریخی شراکت کی شرح گذشتہ دو سالوں کے دوران 57 فیصد کی شرح نمو کے ساتھ غیر سرکاری سرمایہ کاری میں بے مثال کارکردگی کی بدولت حاصل کی گئی۔ جو کہ 2023ء میں غیرسرکاری سرمایہ کاری کی قیمت 959 بلین ریال کی بلند ترین تاریخی سطح پر پہنچ گئی۔

فنون اور تفریحی سرگرمیاں ان سرگرمیوں میں سب سے آگے ہیں جنہوں نے 2021/2022 کے دوران 106 فی صد کی غیر معمولی ترقی حاصل کی جب کہ دیگر سرگرمیوں جیسے رہائش، خوراک، نقل اور حمل کی خدمات میں 77 فی صد اور 29 فی صد کی مضبوط شرح نمو ریکارڈ کی گئی۔

سال 2023ء کے دوران غیر تیل کی سرگرمیوں میں اضافہ شراکت کے تنوع اور ترقی کی رفتار کے لحاظ سے غیرمعمولی تھا کیونکہ سماجی خدمات جیسے صحت، تعلیم اور تفریح میں 10.8 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

حقیقی خدمات کی برآمدات جس کی نمائندگی آنے والے سیاحوں کے اخراجات سے ہوتی ہے نے گذشتہ دو سالوں کے دوران 319 فی صد کی دگنی شرح نمو کے ساتھ تاریخی ریکارڈ قائم کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں