فلسطین اسرائیل تنازع

فلسطینی قیدیوں کے بدلے یرغمالیوں کی رہائی پر مبنی جنگ بندی تجویز سامنے آ گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاہو نے حماس کی طرف سے جنگ بندی کے لیے پیش کردہ حماس کی نئی تجویز کو غیر حقیقت پسندانہ قرر دیا ہے۔ اس تجویز میں حماس نے فلسطینیوں قیدیوں کے بدلے اسرائیلی یرغماللیوں کی رہائی پر آمادگی ظاہر کی ہے۔

خبر رساں ادارے ' اے ایف ہی کے مطابق حما س کی اس نئی تجویز میں ایک سو ایسے فلسطینیوں کی یرغمالویں کے بدلے فوری رہائی کی تجویز شامل ہے جنہیں اسرائیل نے عمر قید کی سزا سنا رکھی ہے۔

اس تجویز میں حماس کی طرف سے کہا گیا ہے کہ اس تجویز پر اتفاق کی صورت میں حماس ابتدائی طور پر +اسرائیلی یرغمالی عورتوں اور بچوں کو رہا کردے گی عمر زیادہ ہے اور بیمار ہیں۔ ان کے بدلے حماس کی طرف سے 700 سے 1000 فلسطینی قیدیوں کی رہائی کے لیے اسرائیل سے مطالبہ کیا گیا ہے۔ تاہم اسرائیلی وزیر اعظم کے دفتر نے اس تجویز کو بھی غیر حقیقت پسندانہ کہہ دیا ہے۔

دوسری جانب مصر اور قطر اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ بندی کے سلسلے میں پائے جانے والے معمولی اختلاف طے کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں۔ تاکہ غزہ میں جاری انسانی بحران کے خطرے سے نکل سکیں اور غزہ قحط کا ماحول گرم ہونے سے پہلے پہلے جنگ بند ہوچکی ہے۔ واضح رہے غزہ کی ایک تہائی آبادی اقوام متحدہ کے مطابق فوری قحط کی زد میں ا سکتی ہے۔

واضح رہے اس سے قبل فرانس میں چہار فریقی مذاکرات کے بعد حماس کو کچھ جنگ بندی تجویز غور کے لیے دی تھی، اس تجویز کے تھت تمام فوجی آپریشز میں وقفہ کی مدت چالیس دن تجویز کی گئی تھی جبکہ ایک اسرائیلی یرغمالی کے بدلے میں دس فلسطینی قیدیوں کی رہائی کے لیے کہا گیاتھا۔

حماس نے اس میں جنگ بندی کو مستقل کرنے کی تجویز شامل کی تھی۔ لیکن اسے اسرائیل نے قبول نہیں کیا تھا۔ حما سکی طرف سے اس بارے میں کہا گیا تھا' غزہ سے اسرائیلی فوج کے انخلا کی بات چیت یرغمالیوں کی اقیک کھیپ کی رہائی کے بعد شروع کرنے کی تجویز دی گئی تھی۔ فلسطینی مزاحمتی تحریک نے رہائی کے اگلے ،مرحلے میں دونوں کے ہاقی تمام قیدیوں کی رہائی کافیصلہ کیا جاناتھا۔

جمعرات کی رات دیر سے حماس نے کہا ہے کہ' اس نے ثالثوں کو ایک جامع تجویز پیش کی ہے۔۔ یہ جنگ بندی اور یترغمالیوں کی رہائی کا احاطہ کرتا ہے۔ غزہ کے بے گھر فلسطینیوں کو ان کے گھروں میں واپس جانے کی ضمانت فراہم لی جائے گی۔نیز اسرائیلی فورسز کی گزہ سے انخلا بھی شامل ہو گا۔ '

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں