قبرص سے دوسرا بحری جہاز امدادی سامان کے ساتھ غزہ روانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

قبرص کی بندر گاہ سے ایک اور امدادی سامان سے بھرا بحری جہاز ہفتے کے روز غزہ روانہ کیا گیا ہے۔ یہ جہاز اس وقت روانہ کیا گیا ہے جب پہلے جہاز کے بارے میں اطلاعات کی تصدیق ہو گئی کہ وہ غزہ کے ساحل کے قریب پہنچ کر اپنے مشن کی تکمیل کے بعد واپس روانہ ہو گیا ہے۔

قبرص سے دوسرے بحری جہاز کی روانگی کے لیے تیار ہو چکنے کی اطلاع جزیرے کے صدر کی طرف سے دی گئی ۔

اس سے قبل جمعہ کے روز پہلے جہاز نے تقریباً دو سو ٹن امدادی سامان کی ترسیل ممکن بنائی۔ صدرنیکوس کرسٹو ڈولڈیز نے صحافیوں کو بتایا' پہلا جہاز غزہ سے واپس قبرص کے لیے چل پڑاہے اور اب ہم دوسرا جہاز 240 ٹن کے امدادی سامان کے ساتھ روانہ کر رہے ہیں۔ '

یہ دوسرا جہاز لاناکا کی بندر گاہ پر روانگی کے حکم کے انتظار میں ہے۔ صدر نے بتایا ۔ تاکہ چھٹے ماہ سے جنگی تباہی کی زد میں غزہ کی پٹی کو امداد بھجوائی جا سکے۔

اس بحری امدادی مشن کے لیے متحدہ عرب امارات اور سپین نے وسائل فراہم کیے امریکہ کے ورلڈ سنٹرل کچن نامی ادارے نے مشن کا انتظام کیا اور قبرص کی بندرگاہ کا استعمال کیا گیا۔ بتایا گیا ہے کہ اب دوسرے جہاز کے ذریعے سامان اتارنے میں کام آنے والے لفٹر اور کرین بھی بھیجی جارہی ہے۔

ادھر غزہ میں کام کرنے والے اقوام متحدہ کے ادارے کے مطابق شمالی غزہ میں دو سال سے کم عمر کا ہر تیسرا بچہ بھوک کی زد میں ہے اور اسے ضروری خوراک نہیں مل پا رہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں