سعودی عرب میں باکسنگ کو فروغ دینے میں ترکی آل الشیخ کا کلیدی کردار ہے: ڈیلی میل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

برطانوی اخبار ’ڈیلی میل‘ کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب کی انٹرٹینمنٹ اتھارٹی کے چیئرمین ترکی آل الشیخ نے مملکت میں باکسنگ کے کھیل میں سرمایہ کاری، اس کے فروغ اور شائقین میں اس کی دلچسپی پیدا کرنے میں کلیدی کردار ادا کیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق مشرق وسطیٰ میں باکسنگ کے کھیل میں سرمایہ کاری نے اس کھیل کو ہمیشہ کے لیے بدل کر رکھ دیا ہے۔ سعودی عرب میں ’کاری ضرب‘ ، ’بدترین انجام‘ ،’آگ کی زنجیر ‘اور ہالی ووڈ کی طرز پرباکسنگ کے فروغ کے لیے ویڈیوز کی اشاعت کے پیچھے بھی ترکی آل الشیخ کا ہاتھ ہے۔

جب آپ کو پریس کانفرنسز ، وزن کی پیمائش اور انٹرویوز انٹونی جوشوا ، ٹائسن فیوری اورفرانسس نجانو کو سعودی عرب میں کھیلوں میں حصہ لینے کے لیے تیار نظرآتے ہیں تو آپ کو یقین کرلینا چاہیے کہ اس کے پیچھےترکی آل الشیخ ہیں۔

وہ ان بڑے عالمی کھیلوں کو جلدی سے سعودی عرب میں لانے کے لیے منصوبہ بند انداز میں کام کررہے ہیں جو طویل اور مشکل مذاکرات کی خصوصیت رکھتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق باکسنگ میں ان کی مستعدی باکسنگ سے محبت کرنے والوں کے لیے ایک تحفہ ہے جو "روز حساب کے واقعے" کے نام سے منعقد کردہ مقابلے میں دیکھا گیا۔ اس میں جوشوا ، ڈینیٹی وائلڈر ، جوزف پارکر ، ڈینیئل ڈوبوا ، گل ملر ، فلپ ہورگووچ ، جمع ہوئے تھے اور آٹو والین نے زور آزمائی کی۔

سعودی انٹرٹینمنٹ اتھارٹی کی صدارت کے دوران ترکی آل الشیخ کو "ریاض سیزن" میں کھیل اور ثقافتی تہوار کی نگرانی سونپی گئی۔ اس کا مقصد سعودی عرب میں کھیلوں اور تفریحی پروگراموں کو موثر انداز میں فروغ دینا تھا۔

کھیلوں کے پہلے بڑے واقعات میں سے ایک "ریاض کپ" تھا جس میں پیرس سینٹ گررمین ٹیم کو مدعو کیا گیا۔ اس میں ریاض ٹیم کا مقابلہ کرنے کے لیے النصر کلب کے کھلاڑی لیونل میسی اور الہلال کے بین الاقوامی فٹ بالر کرسٹیانو رونالڈو شامل ہیں۔

ترکی آل الشیخ نے گذشتہ ہفتے سعودی عرب میں سنوکر کے لیے پہلی پیشہ ورانہ چیمپیئن شپ کا اہتمام بھی کیا تھا۔ یہ مقابلہ رونی اوسولیوان نے جیتا۔ الشیخ نے رونی کو سعودی عرب میں سنوکر کے لیے اپنی اکیڈمی کھولنے کی پیش کش کی۔

یہ بھی کہا گیا ہے کہ اس موسم گرما میں مشرق وسطی میں اب تک کے پہلے یو ایف سی کامبیٹ آرٹس کی میزبانی سعودی عرب کررہا ہے جب کہ ڈبلیوڈبلیو ای ریسلنگ پہلے ہی مشرق وسطی میں رہی ہے۔

مشیر ترکی آل الشیخ نے تقریبا ہر اہم کھیل میں تبادلہ خیال کیا اور اس کی طرف توجہ مبذول کروائی لیکن انہیں سب سے بڑی کامیابی باکسنگ کی دنیا میں ملی تھی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں