دبئی پولیس کا رمضان کریک ڈاؤن، جادو ٹونے کا استعمال کرنے والی بھکارن گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دبئی میں پولیس نے ایک ایشیائی بھکارن کو گرفتار کیا ہے جس کے پاس جادو ٹونے کے تعویذ اور نقوش پائے گئے جن کے بارے میں اسے یقین تھا کہ ان کے اثر سے لوگوں سے رقم حاصل کرنے میں مدد ملے گی۔

محکمۂ عامہ برائے فوجداری تحقیقات میں مشتبہ افراد اور مجرمانہ رجحانات کے شعبے کے ڈائریکٹر بریگیڈیئر علی سالم الشمسی نے بتایا کہ بھکارن کو رہائشی علاقے سے 'کاغذات، اوزار، جادو ٹونے کے تعویذوں اور جادوئی نقاب' کے ساتھ پکڑا گیا۔

تعویذات ایسی چیزیں ہیں جن کے بارے میں لوگوں کا خیال ہے کہ وہ برائی کو روک سکتے یا خصوصی اختیارات دے سکتے ہیں۔ پولیس نے ایک بیان میں کہا کہ بھکارن کا خیال تھا کہ یہ اشیاء لوگوں کو متأثر کرنے میں اس کی مدد کریں گی۔

بریگیڈیئر الشمسی نے کہا کہ گرفتاری میں سہولت کمیونٹی کے ایک رکن نے فراہم کی جس نے فرد کی اطلاع جنرل ڈیپارٹمنٹ آف آپریشنز کے کمانڈ اینڈ کنٹرول سنٹر کو دی۔

بریگیڈیئر الشمسی نے کمیونٹی کے ارکان پر زور دیا کہ وہ بھکاریوں کے ساتھ ہمدردی کرنے یا انہیں رقم فراہم کرنے سے گریز کریں۔

انہوں نے بھکاریوں کی اسکیموں کا شکار نہ ہونے کی اہمیت پر زور دیا جن کا مقصد رمضان کے مقدس مہینے میں لوگوں کے جذبات سے کھیل کر اپنا کام نکالنا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ان طریقوں میں اکثر تراشیدہ کہانیاں اور دھوکہ دہی کے حربے شامل ہوتے ہیں جو عموماً طور پر مساجد کے داخلی راستوں، کلینک، ہسپتال، بازاروں اور گلیوں کے قریب استعمال ہوتے ہیں۔

خاتون کی گرفتاری بھیک مانگنے کے خلاف مہم کے ایک حصے کے طور پر عمل میں آئی جسے دبئی پولیس نے تزویراتی شراکت داروں کے ساتھ مل کر شروع کیا تھا۔ متحدہ عرب امارات میں بھیک مانگنا جرم ہے۔

بریگیڈیئر الشمسی نے کمیونٹی پر زور دیا کہ وہ ٹول فری نمبر 901 یا دبئی پولیس کی سمارٹ ایپ پر ’پولیس آئی‘ سروس کے ذریعے بھکاریوں کی فوری اطلاع دے کر اس مہم میں حکومت اور محکمے کا ساتھ دیں۔ سائبر بھکاریوں کی اطلاع ای کرائم پلیٹ فارم (www.ecrime.ae) کے ذریعے دی جا سکتی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں