رفح پر حملہ کرنے کے متبادل منصوبے کی تفصیلات، مصر کی سرحد پر سکیورٹی سخت کرنا شامل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

جنوبی غزہ کی پٹی میں رفح شہر پر اسرائیل کے حملے کے بارے میں بڑھتی ہوئی بین الاقوامی انتباہات خاص طور پر امریکی وارننگوں کے بعد پچھلے گھنٹوں کے دوران ایک متبادل منصوبے کے بارے میں بہت سی باتیں سامنے آئی ہیں۔

ایک سینیر امریکی اہلکار نے انکشاف کیا کہ ان کا ملک اس ہفتے ہونے والی امریکی اسرائیلی ملاقات کے دوران تجویز کرے گا کہ اسرائیل اس مداخلت کے متبادل کے طور پر مصر اور غزہ کے درمیان سرحدوں کو مزید محفوظ بنایا جائے۔

انہوں نے وضاحت کی کہ "قاہرہ کے ساتھ ایک نئے انتظام تک پہنچنا اور غزہ کی پٹی اور مصری سرزمین کے درمیان اسمگلنگ کے راستے کو منقطع کرنے کے لیے ضروری بنیادی ڈھانچے کی تعمیر حماس کو ختم کرنے کے لیے بے گھر لوگوں سے بھرے شہر میں ایک بڑا زمینی حملہ کرنے سے زیادہ اہم اور موثر ہو گا"۔

انہوں نے کہا کہ "اگراسرائیل تمام شہری ہلاکتوں کے ساتھ رفح پر حملہ کرتا ہے تو فلاڈیلفیا کوریڈور کے ارد گرد مصر کے ساتھ تعاون زیادہ مشکل ہو جائے گا"۔

تعمیر نو

’ٹائمز آف اسرائیل‘کے مطابق انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ جن متبادل منصوبوں پر بات کرنا چاہتا ہے ان میں غزہ کی تعمیر نوشروع کرنے کی کوششوں کو تیزکرنے کے ساتھ ساتھ حماس کے لیے ایک عملی متبادل کی تعمیر بھی شامل ہے۔

غزہ کے جنوب میں رفح میں بے گھر فلسطینیوں کو خیموں نے پناہ دی۔
غزہ کے جنوب میں رفح میں بے گھر فلسطینیوں کو خیموں نے پناہ دی۔

دو سینیر امریکی عہدیداروں کے مطابق یہ رفح میں کوئی بڑا زمینی آپریشن شروع کیے بغیر حماس کے رہ نماؤں کا تعاقب جاری رکھنے کے بارے میں متبادل خیالات بھی پیش کرے گا۔

تاہم ایک اہلکار کے مطابق اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ واشنگٹن اسرائیل کو بتائے گا کہ وہ رفح پر حملہ نہیں کر سکتا، بلکہ وہ اسرائیلی فریق کے ساتھ مل کر کام کرنے پر آمادگی ظاہر کرے گا تاکہ ایک ہی وقت میں اہداف کو حاصل کرنے کے لیے قابل عمل متبادل فراہم کیا جا سکے۔

مزید قتل؟

اہلکارنے وضاحت کی کہ امریکہ کی جانب سے رفح میں ایک بڑے زمینی حملے کی مخالفت کا مطلب یہ نہیں ہے کہ وہ رفح میں یا کسی اور جگہ حماس کے رہ نماؤں کے خلاف مزید قتل عام کرنے یا انہیں نشانہ بنانے کی مخالفت کرتا ہے۔ متبادل منصوبے جو کہ امریکی صدرجو کہ انتظامیہ کی طرف سے ہیں بائیڈن اسرائیلی وفد کو پیش کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

دونوں عہدیداروں نے کہا کہ بائیڈن انتظامیہ اس حقیقت کو نظرانداز نہیں کرتی کہ شہرمیں حماس کے 4 بریگیڈ موجود ہیں لیکن ان کا خیال ہے کہ اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو نے حماس کو شکست دینے کے لیے انہیں ختم کرنے کی اہمیت کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا۔

رفح میں بے گھر افراد
رفح میں بے گھر افراد

امریکہ کا خیال ہے کہ اسرائیل کو بھی آنے والے وقت سے فائدہ اٹھاتے ہوئے محصور فلسطینی پٹی میں انسانی امداد کے داخلے میں اضافہ کرنا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ یہ معلومات نیتن یاہو کی جانب سے کل منگل کو اس بات کی تصدیق کے چند گھنٹے بعد سامنے آئی ہے کہ ان کا ملک "رفح میں فوجی کارروائی کے لیے پرعزم ہے، جبکہ شہریوں کے لیے انسانی بنیادوں پر حل تلاش کر رہا ہے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں