فلسطین اسرائیل تنازع

رام اللہ میں مسلح فلسطینیوں سے جھڑپوں کے دوران چاراسرائیلی فوجی زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

فلسطین کے دریائے اردن کے مغربی کنارے کے وسطی شہر رام اللہ کے مغرب میں کم از کم پانچ گھنٹے تک جاری رہنے والی جھڑپوں کے دوران چار اسرائیلی فوجی زخمی ہوئے۔

یہ جھڑپیں مغربی رام اللہ میں دویلف اسرائیلی بستی کے قریب ہوئی جب مسلح فلسطینیوں نے ایک بس پر فائرنگ کی۔

اسرائیلی فوج نے کمک کے لیے ڈرون اور جنگی طیارے بھی منگوائے اس کے باوجود جھڑپ کم سے کم تین گھنٹے جاری رہی۔

جھڑپ کے بعد اسرائیلی فوج کی بھاری نفری جائے وقوعہ پر پہنچی تاکہ وہاں مزید فلسطینی مسلح افراد کی موجودگی کا پتا چلایا جا سکے۔

سات اکتوبر کو حماس کی طرف سے اسرائیل پر کیے گئے ڈرامائی حملے کے بعد غرب اردن کشیدگی کی لپیٹ میں ہے۔ حماس کے حملےکے نتیجے میں 1140اسرائیلی ہلاک ہوگئے تھے۔

حماس کے مزاحمت کار دو سو کے قریب اسرائیلیوں کویرغمال بنا کر غزہ لے آئے تھے جن میں سے 130 اب بھی غزہ میں ہیں جن میں سے بیشتر کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ اسرائیلی بمباری میں ہلاک ہوچکے ہیں۔

اس واقعے کے بعد اسرائیل نے غزہ میں ایک وسیع جنگ شروع کی جو ابھی تک جاری ہے۔ یہ جنگ اب تک 32 ہزار فلسطینیوں کی جانیں لے چکی ہے اور فوری طور پر کسی قسم کی جنگ بندی کا کوئی امکان دکھائی نہیں دیتا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں