مشرق وسطیٰ

غرب اردن میں فلسطینیوں کے خلاف اسرائیلی گن شپ ہیلی کاپٹر کارروائیاں کرنے لگے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مقبوضہ مغربی کنارے میں فلسطینیوں کے خلاف رمضان المبارک میں اسرائیلی فوج نے کارروائیاں بڑھا دی ہیں۔ جمعہ کے روز اس سلسلے میں رمضان المبارک کے دوران پہلی مرتبہ دیکھا گیا کہ اسرائیلی فوج کے گن شپ ہیلی کاپٹر بھی فلسطینیوں کے خلاف آپریشن میں شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ایک اسرائیلی گن شپ ہیلی کاپٹر نے جمعہ کے روز رام اللہ کے قریب ایک فلسطینی کا پیچھا کرتے ہوئے اسے گن شپ سے فائرنگ کرتے ہوئے قتل کر دیا۔ یہ 'شوٹ آؤٹ' آپریشن تقریباً ایک گھنٹے تک جاری رہا۔ ہیلی کاپٹر کو زمین پر موجود اسرائیلی فوج کی مدد بھی حاصل تھی۔

اسرائیلی فوج نے الزام لگایا ہے کہ فلسطینی نے اسرائیلی گاڑی پر فائرنگ کی تھی۔ فوجی بیان کے مطابق اس فلسطینی کی فائرنگ سے کوئی شخص زخمی یا ہلاک نہیں ہوا تھا۔ تاہم فوج نے کارروائی کرتے ہوئے اسے ہلاک کر دیا۔ دوسری جانب اسرائیلی میڈیا نے رپورٹ کیا ہے کہ بندوق بردار کی فائرنگ سے سات لوگ زخمی ہوئے ہیں۔

یاد رہے مغربی کنارے میں اسرائیلی جنگی کارروائیاں اور فلسطینیوں کے خلاف پرتشدد واقعات 7 اکتوبر 2023 کے بعد سے کافی بڑھے ہوئے ہیں۔ جبکہ رمضان المبارک میں اسرائیلی فوج کی کارروائیوں میں مزید اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔ اسرائیلی فوج فلسطینیوں کو مغربی کنارے اور مشرقی یروشلم میں اکٹھا دیکھنے کو تیار نہیں ہے کہ اس طرح وہ مسجد اقصیٰ کی طرف جا سکتے ہیں۔

اب تک اسرائیلی فوجی کارروائیوں اور اسرائیلی فوج کے معاون یہودی آبادکاروں نے 350 سے زائد فلسطینیوں کو مغربی کنارے میں شہید کر دیا ہے۔ اس عرصے کے دوران اسرائیلی اعداد و شمار کے مطابق 13 اسرائیلی بھی ہلاک ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں