غزہ جنگ بندی مذاکرات کے بعد سی آئی اے اور موساد کے سربراہ دوحہ سے روانہ ہو گئے: ذرائع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مذاکرات کے بارے میں بریفنگ لینے والے ایک ذریعے نے اے ایف پی کو بتایا کہ امریکی انٹیلی جنس چیف ولیم برنز اور ان کے اسرائیلی ہم منصب ڈیوڈ بارنیا غزہ میں جنگ بندی اور یرغمالیوں کی رہائی کے معاہدے پر بات چیت کے بعد ہفتے کے روز تادیر قطر سے روانہ ہو گئے۔

مذاکرات کی حساسیت کی وجہ سے ذرائع نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ سی آئی اے اور موساد کے سربراہان "اپنی متعلقہ ٹیموں کو مذاکرات کے تازہ ترین دور کے بارے میں بریفنگ دینے کے لیے دوحہ روانہ ہوئے"۔

باخبر ذریعے نے مزید کہا، "مذاکرات میں یرغمالیوں اور قیدیوں کے تبادلے کے لیے تفصیلات اور تناسب پر توجہ مرکوز کی گئی" اور وضاحت کی کہ "تکنیکی ٹیمیں دوحہ میں موجود ہیں۔"

امریکہ، قطری اور مصری ثالث اسرائیل اور حماس کے درمیان دوسری جنگ بندی اور اسرائیلی جیلوں میں قید فلسطینی قیدیوں کے بدلے اسرائیلی اسیران کی رہائی کے لیے کئی ہفتوں سے پسِ پردہ بات چیت میں مصروف ہیں۔

اسرائیل نے جمعے کے روز کہا تھا کہ گذشتہ ہفتے شروع ہونے والے مقدس اسلامی مہینے رمضان سے قبل جنگ بندی کی ناکام کوششوں کے بعد مذاکرات دوبارہ شروع ہوئے اور اس کی جاسوسی ایجنسی کے سربراہ کو ایک ہفتے میں اپنے دوسرے دورے پر دوحہ واپس آنا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں