بین الاقوامی برادری لبنان پر اسرائیلی حملے رکوانے کے لئے اسرائیل پر دباؤ ڈالے: لبنان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنان کے نگران وزیر اعظم نجیب میقاتی نے بین الاقوامی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ لبنان پر اسرائیلی حملوں کو رکوانے کے لئے اسرائیل پر دباؤ ڈالے۔

میقاتی کی طرف سے یہ مطالبہ سلامتی کونسل میں فوری جنگ بندی قرار داد کی منظوری کے بعد پیر کے روز سامنے آیا یے۔

اسرائیلی فوج اور ایرانی حمایت یافتہ حزب اللہ سرحد پار سے لبنان کی جنوبی سرحد پر مسلسل کئی ماہ سے گولہ باری کا تبادلہ کر رہے ہیں۔ حزب اللہ کا کہنا ہے کہ وہ یہ کارروائیاں غزہ میں اسرائیلی جنگ کے خلاف فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کے لیے کرتی ہے، تاہم سلامتی کونسل میں منظور کی گئی قرار داد پر ابھی حزب اللہ کا کوئی تبصرہ سامنے نہیں آیا ہے۔

نگران وزیر اعظم میقاتی کے دفتر سے پیر کے روز جاری کردہ بیان کے مطابق سلامتی کونسل میں منظور کی گئی قرار داد خوش آئند ہے اور لبنان اس کا خیر مقدم کرتا ہے۔ بیان میں اس قرار داد کو اسرائیلی جارحیت روکنے کے لئے پہلا قدم قرارا دیا گیا ہے۔

انہوں نے بین الاقوامی برادری سے اپیل کی ہے کہ اسرائیل پر دباؤ ڈالا جائے تاکہ لبنان کے اندر ہونے والے اسرائیلی حملے بھی رک سکیں۔ ادھر اسرائیلی وزیر دفاع یوو گیلنٹ کا کہنا ہے کہ جب تک یرغمالی رہا نہیں ہوتے تب تک غزہ میں جنگ نہیں روکی جائے گی۔

میقاتی نے ماہ فروری میں اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ غزہ میں جنگ بندی رکنے کی صورت میں لبنان اور اسرائیل کے درمیان بھی دشمنی و کشیدگی میں کمی کے لیے بات چیت کا سلسلہ شروع ہو جائے اور سرحدی تنازعے کا خاتمہ ممکن ہو جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں