حرم مکی میں زائرین کی طبی دیکھ بھال کے لیے 30 ایمرجنسی فرسٹ ایڈ بیگ فراہم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مسجد حرام میں ماہ صیام کے دوران روزہ داروں ، زائرین اور معتمرین کی خدمت کے لیے غیرمعمولی انتظامات کئے گئے ہیں۔ اس ضمن میں حرم مکی شریف میں رمضان کے مہینے اور رواں سال کے حج کے سیزن کے دوران ’سواعد الصحۃ‘ کے رضا کاروں کو تیس جدید ترین ایمرجنسی فرسٹ ایڈ بیگز فراہم کیے گئے۔ ان ایمرجنسی بیگز کو آسانی کے ساتھ ایک سے دوسری جگہ منتقل کیا جا سکتا ہے۔

مکہ مکرمہ کے محکمہ صحت نے حال ہی میں شہزادی صیتہ بنت عبدالعزیز آل سعود ٹرسٹ کے ساتھ ایک مشترکہ تعاون کا معاہدہ کیا ہے۔ اس معاہدے کے تحت ’سواعد ہیلتھ‘ کے رضاکاروں کو ابتدائی طبی امداد کے تھیلے اور طبی سامان فراہم کیا گیا ہے۔

خطے میں صحت کے امور کے ڈائریکٹر ڈاکٹر وائل مطیر نے کہا کہ یہ معاہدہ پبلک سیکٹر کے درمیان کمیونٹی کی شراکت کے فریم ورک کا حصہ ہے جس کی نمائندگی مکہ مکرمہ کی صحت اور غیر منافع بخش شعبے کی طرف سے کی جاتی ہے۔ اس میں شہزادی صیۃ بنت عبدالعزیز آل سعود رحمھا اللہ ٹرسٹ بھی شامل ہے۔

دوسری جانب سعودی عرب کے محکمہ اوقاف کے سیکرٹری خالد زہران نے وضاحت کی کہ معاہدے کے مطابق اوقاف اعلیٰ ترین معیار کے تمام طبی سامان کے ساتھ فرسٹ ایڈ بیگ فراہم کرنے کے لیے پرعزم ہے جو رضاکاروں کو اپنی ابتدائی طبی امداد فراہم کرنے میں معاون ثابت ہوں گے۔

دوسری جانب، مکہ صحت کے نگران محکمہ برائے صحت رضاکارانہ اور کمیونٹی کی شرکت کے ڈائریکٹر "محاسن شعیب" نے بتایا کہ یہ شراکت حج اور عمرہ کے سیزن کے دوران رضاکارانہ امداد کے 5 سیزن کے بعد ہوئی تاکہ ہنگامی خدمات کو بہتر بنایا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں