فلسطین اسرائیل تنازع

یحییٰ السنور جہاں بھی ہے، ہم زندہ یا مردہ اس تک پہنچیں گے: اسرائیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسرائیلی صدر اسحاق ہرزوگ نے کہا ہے کہ غزہ میں حماس تحریک کے رہ نما یحییٰ السنوار کو اسرائیلی قیدیوں کی بازیابی کے لیے "مردہ یا زندہ" ہرصورت میں حاصل کرنا ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ "سب کچھ السنوار سے شروع ہوتا ہے اوراسی پر ختم ہوتا ہے"۔

یروشلم پوسٹ اخبار کی رپورٹ کے مطابق یہ بات اسرائیلی صدر کی جانب سے کل منگل کو یروشلم میں ایک تعلیمی مرکز کے افتتاح کے موقع پر کی گئی تقریر میں سامنے آئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ "السنوار وہی ہے جس نے اکتوبر میں حملہ کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور وہ علاقائی صورت حال کو بڑھاوا دینے اور ہمارے اور دنیا کے باقی ممالک کے درمیان اختلافات کو ہوا دینے کی کوشش کر رہا ہے"۔

اسرائیلی صدر اسحاق ہرزوگ
اسرائیلی صدر اسحاق ہرزوگ

انہوں نے مزید کہاکہ "پوری دنیا اور ہمارے خطے کو یہ جان لینا چاہیے کہ ذمہ داری صرف ان [السنوار] پر آتی ہے۔ یہ معاملہ کامیاب نہیں ہوگا۔ ہم اس کی اجازت نہیں دیں گے"۔

ہرزوگ نے زور دیا کہ "کوئی چارہ نہیں ہے۔ ہمیں لڑائی جاری رکھنی چاہیے، اور ہمیں زندہ یا مردہ السنوار تک پہنچنا چاہیے، تاکہ تمام قیدیوں کو واپس کیا جا سکے۔

رفح آپریشن میں اسرائیل کو گھسیٹنے کا منصوبہ

قابل ذکر ہے کہ گذشتہ 29 فروری کو امریکی رپورٹس نے باخبر ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا تھا کہ غزہ میں حماس کے سربراہ یحییٰ السنوار "اسرائیل کو رفح آپریشن میں گھسیٹنے کا ارادہ رکھتے ہیں"۔ رپورٹس میں کہا گہا گیا ہے کہ وہ اسرائیل کو رفح میں آپریشن میں گھسیٹ کرخود فتح یاب ہونا چاہتے ہیں۔

رپورٹس میں نشاندہی کی کہ السنوار نے قطر میں تحریک کی قیادت کو ایک پیغام پہنچایا، جس میں کہا گیا کہ 'ہمارے پاس اسرائیلی موجود ہیں جہاں ہم چاہتے ہیں'۔

انہوں نے بتایا کہ فروری کے اوائل میں ایک میٹنگ ہوئی تھی، جس میں حماس کی سینیر قیادت نے اس خدشے پر بات کی تھی کہ تحریک اپنے مضبوط ٹھکانوں پر حملے اور اپنے ارکان کی ہلاکت سے غزہ میں زمینی جنگ ہار سکتی ہے لیکن السنوار کا کہنا تھا کہ حماس کو شکست نہیں ہوسکتی‘‘۔

اسرائیلی اور امریکی حکام اس بات پر متفق ہیں کہ یحییٰ السنوار اب بھی جنوبی غزہ کی پٹی میں خان یونس میں سرنگوں کے اندر چھپا ہوا ہے۔ واشنگٹن پوسٹ کی رپورٹس کے مطابق السنوار اپنے ارد گرد اسرائیلی قیدیوں کے درمیان ہے۔ انہیں وہ انسانی ڈھال کے طور پر استعمال کرتا ہے۔

السنوار کے ٹھکانے کا انکشاف کرنے سے بھی سب سے بڑا چیلنج اسے مارنے یا گرفتار کرنے کے لیے اس طرح سے آپریشن کرنا ہے جس سے زیر حراست افراد کو خطرہ لاحق نہ ہو۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں