شام میں حزب اللہ کے ایک ٹھکانے پر اسرائیل کا حملہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے کہا ہے کہ ایک اسرائیلی حملے میں دارالحکومت دمشق کے نواح میں واقع بجدلیہ گاؤں کو نشانہ بنایا گیا۔ ان حملوں کے نتیجے میں جنوبی دمشق کے دیہی علاقوں میں دھماکوں کا سلسلہ شروع ہوا۔ العربیہ یا الحدث کو بیانات میں بتایا گیا کہ دمشق کے دیہی علاقوں میں حزب اللہ کے زیر استعمال مقام کو نشانہ بنایا گیا ہے۔

پاسداران انقلاب کے اہداف پر بمباری

یہ مشرقی شام میں پاسداران انقلاب کے اہداف پر بمباری کے دو دن بعد ہوا ہے جس کے نتیجے میں کم از کم 13 ایران نواز جنگجو مارے گئے تھے۔ اسرائیلی سیکیورٹی ذرائع نے اس وقت کہا تھا کہ قدس فورس کے جن اہداف کو نشانہ بنایا گیا ان کا تعلق حزب اللہ کو ہتھیاروں کی سمگلنگ سے تھا۔

گزشتہ برسوں کے دوران اسرائیل نے شام میں سینکڑوں فضائی حملے کیے جن میں بنیادی طور پر ایرانی اور لبنانی حزب اللہ کے اہداف کو نشانہ بنایا گیا ہے۔ حملوں میں ہتھیاروں اور گولہ بارود کے گوداموں اور سامان کی ترسیل کے ساتھ ساتھ شامی فوج کے مقامات بھی شامل تھے۔

حملوں میں تیزی

سات اکتوبر کو غزہ میں جنگ شروع ہونے کے بعد اسرائیل کے شام میں حملوں میں شدت آ گئی ہے۔ اسرائیل شاذ و نادر ہی ان حملوں کے نفاذ کی تصدیق کرتا ہے لیکن وہ اس بات کا اعادہ کرتا ہے کہ وہ شام میں اپنی فوجی موجودگی کو مستحکم کرنے کے لیے تہران کی کوششوں کا مقابلہ کرے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں