جنوبی لبنان میں اقوامِ متحدہ کے مبصرین کی گاڑی پر حملہ، چار ارکان زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

دو سکیورٹی ذرائع نے رائٹرز کو بتایا کہ ہفتے کے روز ایک جنوبی لبنان کے سرحدی شہر رمیش کے قریب ایک حملے میں اقوام متحدہ کے مبصرین کو لے جانے والی ایک گاڑی کو نشانہ بنایا جس میں متعدد مبصرین زخمی ہو گئے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان افیخائی ادرعی نے اس بات کی تردید کی کہ اسرائیلی افواج نے جنوبی لبنان میں اقوامِ متحدہ کے امن مشن سے تعلق رکھنے والی گاڑی کو نشانہ بنایا۔ یونیفل یا اقوامِ متحدہ کے تکنیکی مبصر مشن یو این ٹی ایس او کی جانب سے فوری طور پر کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا۔

سکیورٹی ذرائع میں سے ایک نے بتایا کہ کار میں اقوامِ متحدہ کے تین تکنیکی مبصر اور ایک لبنانی مترجم سوار تھا۔ اس ذریعے اور ایک دوسرے سکیورٹی ذریعے نے کہا کہ اسرائیلی حملے میں کار میں سوار کئی افراد زخمی ہوئے تھے۔

اسرائیل غزہ جنگ کے متوازی تقریباً چھ ماہ سے جنوبی لبنان میں لبنانی مسلح گروپ حزب اللہ کے ساتھ فائرنگ کا تبادلہ کر رہا ہے۔

لبنان پر اسرائیل کی گولہ باری سے حزب اللہ کے تقریباً 270 مزاحمت کار لیکن 50 کے قریب شہری بھی مارے گئے ہیں - جن میں بچے، طبیب اور صحافی بھی شامل ہیں - اور اس نے یونی فل اور لبنانی فوج دونوں کو نشانہ بنایا۔

نومبر میں یونی فل نے کہا تھا کہ اس کا ایک گشت جنوبی لبنان میں اسرائیلی گولیوں کی زد میں آیا جس میں کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

یونی فل نے گذشتہ ماہ کہا کہ اسرائیلی فوج نے واضح طور پر قابلِ شناخت صحافیوں کے ایک گروپ پر فائرنگ کر کے بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کی جس سے رائٹرز کا ایک صحافی ہلاک ہو گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں