ہم پورے مشرق وسطیٰ میں جنگ لڑ رہے ہیں: اسرائیلی وزیر دفاع

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی وزیر دفاع نے غزہ کی جنگ کو روکنے کے بجائے پورے مشرق وسطیٰ میں اپنی جنگی حکمت عملی کو دی گئی وسعت کا کھلے عام اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسرائیل اس وقت پورے علاقے میں اپنے دشمنوں کے خلاف کارروائیوں میں مصروف ہے۔ یوآو گیلنٹ نے کہا ہم دشمنوں کو ان کی دھمکیوں اور ان کی طرف سے ملک کے لئے پیدا کردہ خطرات پیدا کرنے کی قیمت چکانے پر مجبور کرنے کے لئے ایسا کر رہے ہیں۔

اسرائیلی وزیر دفاع نے یہ بیان اپنے حالیہ دورہ امریکہ کے بعد اسرائیل کی آئندہ جنگی حکمت عملی کے بارے میں پارلیمانی کمٹی کے سامنے دیا ہے۔ یہ اسرائیلی حکومت اور فوج کی جنگی سوچ اور عزم کا آئینہ دار بیان ہے۔ جو کمیٹی میں پالیسی بیان کے طور پر دیا گیا۔ کمیٹی میں وزیر دفاع کے خطاب کو وزارت دفاع نے بیان کی صورت میڈیا کو جاری کیا ہے۔

جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے ہم اس وقت خطے میں کئی محاذوں پر جنگ لڑ رہے ہیں۔ اس چہار طرف لڑی جانے والی جنگ کی گواہی ہمیں ہر روز مل رہی ہے۔ اس جنگی گواہی کو ہم نے حالیہ چند دنوں میں بھی دیکھا ہے۔ تاہم ان کے حوالے سے جاری کردہ بیان میں شام یا لبنان میں حالیہ اسرائیلی حملوں کا واضح ذکر نہیں کیا گیا ہے۔ البتہ اشارےا موجود ہیں۔

اسرائیلی وزیر دفاع نے کہا ' ہم ہر جگہ کارروائیاں کر رہے ہیں۔یہ کارروائیاں ہر روز جاری ہیں۔ تاکہ اپنے دشمنوں کو مضبوط ہونے سے روکے رکھیں۔ نیز یہ پورے مشرق وسطیٰ کے لئے پیغام دینے کے لئے ہے کہ جو بھی ہمارے لئے خطرہ بننے کی کوشش کرے گا ، ہم اسے اس کی قیمت چکانے پر مجبور کر دیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں