سرحد کے قریب اردن کے اندر ایک ڈرون گر کر تباہ: اسرائیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے اعلان کیا کہ منگل کو اسرائیل کی سرحد کے قریب اردنی علاقے میں ایک "مشتبہ فضائی ہدف" گرا ہے۔ مقامی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق یہ ایک ڈرون ہے جو کھلے علاقے میں گر کر تباہ ہو گیا۔

فوج نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ ہدف بحیرہ احمر پر واقع اسرائیلی بندرگاہ ایلات کے شمال مشرق میں گرا، جسے غزہ جنگ کے دوران یمنی حوثی گروپ کی طرف سے ڈرونز اور میزائلوں سے بار بار حملوں کا نشانہ بنایا گیا۔

اسرائیلی آرمی ریڈیو نے اطلاع دی ہے کہ ایک ڈرون اردن کی حدود میں رامون ہوائی اڈے کے قریب گر کر تباہ ہو گیا ہے۔

دریں اثناء اسرائیلی براڈکاسٹنگ کارپوریشن نے کہا کہ رامون ایئرپورٹ کے قریب گرنے والا ڈرون سکیورٹی کی تربیتی مشق کے دوران پھٹ گیا اور سائرن نہیں بجے۔

فوج نے سوموار کو کہا تھا کہ ایلات نیول بیس کی ایک عمارت کو مشرقی سمت سے اسرائیل کی طرف سے داغے گئے ایک شے کے ذریعےگرایا گیا۔ فوج نے کہا کہ یہ عراق سے آیا ہے۔ ایک عراقی مسلح دھڑے نے جس کا ایران کے ساتھ اتحاد ہے اعلان کیا کہ اس نے حملہ کیا ہے۔

حوثیوں کے حملے

یمن میں حوثیوں نے 7 اکتوبر کو اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ کے آغاز کے بعد سے اسرائیل پر ڈرون اور میزائل حملوں کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے، جن میں سے زیادہ تر اپنے اہداف تک پہنچنے میں ناکام رہے اور اکثر انہیں روکا جا سکا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں