فلسطین اسرائیل تنازع

غزہ میں سات امدادی کارکنوں کی اسرائیلی بمباری سے ہلاکتوں پرجوبائیڈن کا دل ٹوٹ گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

غزہ میں سات امدادی کارکنوں کی اسرائیلی بمباری سے ہلاکتوں پر جوبائیڈن کا دل ٹوٹ گیا

غزہ میں چھ ماہ سے جاری اسرائیلی جنگ کے دوران اب تک اسرائیلی فوج کی بمباری اور گولہ باری سے ہلاک ہونےوالے 32916 فلسطینیوں کے درمیان امریکی ' ورلڈ سینٹرل کچن ' کے ساتھ وابستہ سات امدادی کارکنوں کی ہلاکت سے امریکی صدر جوبائیدن کا دل ٹوٹ گیا ہے۔

یہ تازہ افسوسناک واقعہ پیر کے روز غزہ میں اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں اس وقت پیش آیا جب اسرائیلی فوج نے غزہ کے بھوک اور قحط زدہ فلسطینیوں میں خوراک اور امداد تقسیم کرنے کی کوشش کرنے والوں پر بھی بم برسا دیے۔

صدر جوبائیدن نے منگل کے روز اس بارے میں اپنے بیان میں کہا ہے کہ ' وہ غصے اور دل شکستگی کی حالت میں ہیں۔'کہ غزہ میں اسرائیلی بمباری سے سات کارکن مارے گئے ہیں۔' انہوں نے اسرائیل سے مطالبہ کیا ہے کہ اس واقعے کی تحقیئات ہونی چاہییں اور امدادی کارکنوں کو محفوظ بنانے کے لیے اقدامات کیے جانے چاہییں۔

جوبائیڈن نے اس سلسلے میں کہا' اسرائیلی تحقیقات لازماً تیزی سے ہونی چاہییں اور احتساب لانے والی ہونی چاہییں۔ نیز ان تحقیقات کو ضرور عوام کے سامنے لانا چاہیے۔ واضح رہے اس طرح کا انسانی احساسات کے تاثر والا اور قدرے رسمیت سے بلند بیان کافی دیر بعد نظر آیا ہے۔

صدر جوبائیڈن نے مزید کہا ' یہ افسوسناک واقعہ اکیلا نہیں ہے ، اس سے پہلے بھی ایسے واقعات ہو چکے ہیں۔ جنگ کے دوران حالیہ دنوں میں یہ واقعہ بد ترین ہے کہ کئی امدادی کارکن پہلے بھی مارے جا چکے ہیں۔ ' اقوام متحدہ کے صرف ایک ادارے ' اونروا ' کے امدادی کارکنوں کی تعداد تقریباً 155 ہے جنہیں اسرائیلی فوج نے چھ ماہ کی جنگ کے دوران نشانہ بنایا ہے۔

خیال رہے امدادی کارکنوں کو نشانہ بنانے کے اسرائیلی فوج کے تازہ ظالمانہ اقدام میں آسٹریلیا ، برطانیہ، امریکہ۔ پولینڈ، کینیڈا اور فلسطین کے امدادی کارکن بمباری کر کے ہلاک کیے گئے ہیں۔ اس بارے میں نیتن یاہو نے بس اتنا کہا ہے 'یہ واقعہ بغیر جانے بوجھے کیا گیا ہے اور افسوسناک ہے۔ اس لیے اسرائیلی فوج اپنے طور پر اس واقعے کی آزادانہ تحقیقات کرائے گی۔'

جبکہ صدر جوبائیڈن کے بقول ' امریکہ نے اسرائیل کو بار بار کہا ہے کہ غزہ میں حماس کے خلاف جنگ میں انسانی بنیادوں پر کارروائیوں کو شہری ہلاکتوں کے بغیر کرنے کی کوشش کی جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ اسرائیل کو پہلے کی طرح اس بارے میں کہتے رہیں گے۔ تاہم انہوں نے اس بارے میں کچھ نہیں کہا کہ اسرائیل امریکی بات نہ سننے پر کسی پالیسی تبدیل کا اشارہ بھی کبھی دیں گے یا نہیں۔

صدر جوبائیڈن نے امریکی ادارے ' ورلڈ سینٹرل کچن ' کے سربراہ اور بانی جوز اینڈریس کے ساتھ ان سات کارکنوں کی اچانک ہلاکت پر اظہار تعزیت کیا ہے۔'

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں