فلسطین اسرائیل تنازع

پوپ کا اسرائیلی حملے میں غزہ کے امدادی کارکنان کی ہلاکت پر ’گہرے افسوس‘ کا اظہار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

پوپ فرانسس نے بدھ کو سات خیراتی کارکنان کی ہلاکت پر اپنے "گہرے افسوس" کا اظہار کیا جو غزہ میں امداد کی ترسیل کے دوران اسرائیلی حملے میں ہلاک ہو گئے۔

87 سالہ پوپ نے ویٹیکن میں اپنے ہفتہ وار سامعین سے خطاب کے دوران کہا، "میں ہلاک شدہ رضاکاروں کے لیے اپنے گہرے رنج کا اظہار کرتا ہوں جبکہ وہ غزہ میں انسانی امداد تقسیم کر رہے تھے۔"

"میں ان کے اور ان کے اہلِ خانہ کے لیے دعا گو ہوں۔"

ایک شخص اس گاڑی کو دیکھ رہا ہے جس میں 2 اپریل 2024 کو وسطی غزہ کی پٹی کے دیر البلح میں عالمی مرکزی کچن (ڈبلیو سی کے) کے ملازمین اسرائیلی فضائی حملے میں مارے گئے تھے۔ (رائٹرز)
ایک شخص اس گاڑی کو دیکھ رہا ہے جس میں 2 اپریل 2024 کو وسطی غزہ کی پٹی کے دیر البلح میں عالمی مرکزی کچن (ڈبلیو سی کے) کے ملازمین اسرائیلی فضائی حملے میں مارے گئے تھے۔ (رائٹرز)

انہوں نے غزہ کی "خستہ حال اور مصیبت زدہ شہری آبادی" کے لیے انسانی امداد تک رسائی کے لیے اپنی اپیل کی تجدید کی۔

اسرائیل کے دفاعی سربراہ نے بدھ کے روز عالمی مرکزی کچن کے عملے پر حملے کو ایک "سنگین غلطی" قرار دیا جب ہلاکتوں کے بعد بین الاقوامی سطح پر غم و غصے کی لہر دوڑ گئی۔

غزہ کی پٹی میں اسرائیل کی بے رحمانہ مہم میں سات اکتوبر سے اب تک علاقے کی وزارتِ صحت کے مطابق کم از کم 32,916 افراد جاں بحق ہو چکے ہیں جن میں زیادہ تر خواتین اور بچے شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں