حماس کے سینیر رہنما اکرم سلامہ کو فضائی حملے میں ہلاک کر دیا: اسرائیلی فوج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فوج نے آج ہفتے کے روز اعلان کیا ہے کہ اس نے گذشتہ بدھ کو جنوبی غزہ کی پٹی میں ایک فضائی حملے میں ایک ایسے شخص کو ہلاک کر دیا ہے جسے اس نے حماس تحریک کی داخلی سلامتی کا ایک سینیر رہنما بتایا ہے۔

اسرائیلی فوج اور اسرائیلی جنرل سکیورٹی سروس (شین بیت) کے مشترکہ اعلان میں کہا گیا ہے کہ اکرم عبدالرحمٰن حسین سلامہ حماس میں کئی اہم عہدوں پر فائز تھے۔وہ خان یونس کے علاقے کے نائب سربراہ بھی تھے اور انہوں نے اسرائیل پرحملوں کی منصوبہ بندی میں معاونت کی تھی۔

انہوں نے وضاحت کی کہ یہ کارروائی اسرائیلی فوج اور شین بیت کی انٹیلی جنس معلومات پر مبنی تھی اور یہ اسرائیلی فضائیہ کے طیاروں نے کی تھی۔

اسی حوالے سے فلسطینی خبر رساں ایجنسی نے ہفتے کے روز اطلاع دی ہے کہ غزہ کی پٹی کے مختلف علاقوں میں شہریوں کے گھروں پر اسرائیلی فوج کی جانب سے میزائل اور توپ خانے کی شیلنگ میں متعدد فلسطینی شہید اور دیگر زخمی ہو گئے۔

اسرائیلی فوج نے غزہ شہر کے جنوب مشرق میں الزیتون محلے، اس کے مرکز میں واقع الصبرہ محلے اور شہر کے جنوب مغرب میں تل الھویٰ اور شیخ عجلین محلوں میں شہریوں کے گھروں کو توپ خانے سے نشانہ بنایا۔ ان حملوں میں ایک درجن کے قریب فلسطینی جاں بحق اور زخمی ہوئے۔ زخمیوں کو بیپٹسٹ ہسپتال لے جایا گیا ہے جن میں سے بعض کی حالت خطرے میں بیان کی جاتی ہے۔

اسرائیلی توپخانے نے غزہ کی پٹی کے وسط میں المغراقہ، الزہراء اور نصیرات کیمپ کے شمالی مضافات کے علاقوں میں بھی شہریوں کے گھروں پر بمباری کی، جس کے نتیجے میں متعدد شہری مارے گئے

غزہ میں وزارت صحت نے اعلان کیا ہے کہ سات اکتوبر سے جاری جنگ میں غزہ کی پٹی میں 33,091 افراد جاں بحق اور 75,750 افراد زخمی ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں