عراقی مسلح گروپوں کا اسرائیل کے شہر حیفا میں آئل ریفائنریوں پر حملوں کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

عراقی مسلح دھڑوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے آج ہفتے کو علی الصبح اسرائیل کے شہر حیفا میں آئل ریفائنریوں پر ڈرون سے حملہ کیا ہے۔

خود کو "عراق میں اسلامی مزاحمت" قرار دینے والے دھڑوں نے ایک مختصر بیان میں کہا ہے کہ یہ حملہ مسلح فلسطینی دھڑوں اور اسرائیل کے درمیان غزہ کی پٹی میں جنگ شروع ہونے کے بعد سے "معصوم فلسطینی شہریوں کے خلاف صہیونی قتل عام کے جواب میں" کیا گیا ہے۔

اس بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ وہ غزہ کی پٹی میں اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ کے جواب میں اسرائیلی اہداف پر حملے جاری رکھے گا۔

عراقی دھڑوں نے اس سے قبل غزہ کی پٹی پر اسرائیلی جنگ کے آغاز کے بعد سے عراق اور شام میں اسرائیلی اہداف اور امریکی افواج پر درجنوں حملوں کی ذمہ داری قبول کی تھی۔

شام کے دارالحکومت دمشق میں ایرانی سفارت خانے پر اسرائیلی حملے کے بعد ایران نے بار بار دھمکی دی ہے کہ وہ اس جارحانہ کارروائی کا بدلے لے گا اور اسرائیل سزا سے نہیں بچ سکے گا۔

اس سے قبل ایرانی پارلیمنٹ میں قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیٹی کے رکن اور پاسداران انقلاب کے سابق رکن اسماعیل کوثری نے اعلان کیا تھا کہ "مزاحمتی محاذ" کہلانے والے اس میں بہت سے عناصر ہیں جو جواب دیں گے۔اگر ضرورت پڑی تو ہم خود جواب دیں گے"۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں