لبنان میں اسرائیلی ڈرون مار گرائے جانے کے بعد وادی بقاع میں اسرائیلی بمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

حرب اللہ کی جانب سے اسرائیلی ڈرون کو مار گرانے کے چند گھنٹے بعد اسرائیل نے ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شب وادی بقاع کے مشرقی علاقوں میں متعدد مقامات پر بمباری کی ہے۔

ہمارے ذرائع کے مطابق اسرائیل نے ملک کے مشرق میں بعلبک کے دو علاقوں پر چار حملے کیے جن میں سے ایک نے ملک کے مشرق میں بعلبک شہر کے قریب السفاری کے علاقے میں ہتھیاروں کے ایک خالی اسٹور کو نشانہ بنایا۔

خبر رساں ادارے ’رائیٹرز‘ نے دو لبنانی سکیورٹی ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ حملوں میں سے ایک نے شام کی سرحد کے قریب واقع گاؤں جنتا میں لبنانی حزب اللہ کے تربیتی کیمپ کو نشانہ بنایا۔

ایمبولینسیں ان علاقوں کی طرف روانہ ہوئیں جہاں بمباری کی گئی تھی۔

ہفتے کے روز حزب اللہ نے لبنانی سرزمین پر ایک اسرائیلی "ہرمز 450" مسلح ڈرون کو مار گرانے کا اعلان کیا تھا جب کہ اسرائیلی فوج نے تسلیم کیا کہ اس کا ایک ڈرون علاقے میں زمین سے فضا میں مار کرنے والے میزائل سے مار گرایا گیا تھا۔

اسرائیلی فوج نے ایک مختصر بیان میں کہا کہ "کچھ دیر پہلے لبنان کی فضائی حدود میں کام کرنے والے فضائیہ کے ایک ڈرون پر زمین سے فضا میں مار کرنے والا میزائل داغا گیا۔ ڈرون لبنان کے اندر گر کر تباہ ہو گیا"۔ فوج کے بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ’’واقعہ کی تحقیقات جاری ہیں‘‘۔

لبنان اور اسرائیل کے درمیان سرحد پر باہمی حملوں کی تعداد میں حال ہی میں اضافہ ہوا ہے۔ اسرائیلی حکام کی جانب سے لبنانی سرزمین پر حملوں کا دائرہ وسیع کرنے کی دھمکیوں میں کہا گیا ہے کہ جب تک حزب اللہ کے جنگجو سرحد کےقریب سے پیچھے نہیں ہٹتے حملے جاری رہیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں