فلسطین اسرائیل تنازع

رفح پر حملہ کی تاریخ طے کر لی ، حملہ ضرور کریں گے : نیتن یاہو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیل کے وزیر اعظم نیتن یاہو نے اعلان کیا ہے کہ ان کے ملک نے رفح کے گنجان آباد شہر پر ایک بھر پور فوجی حملے کے لیے ایک تاریخ بھی مقرر کر لی ہے۔ تاکہ غزہ کے جنوب میں حماس کے اس آخری گڑھ کو ختم کا جا سکے۔

واضح رہے رفح شہر غزہ کے انتہائی جنوب میں مصری سرحد کے ساتھ جڑا ہوا شہر ہے۔ جس میں 15 لاکھ سے زیادہ فلسطینی پناہ گزینوں نے سات اکتوبر سے جاری جنگ میں پناہ لے رکھی ہے۔

نیتن یاہو نے اسرائیل کی رفح پر حملے کے لیے تاریخ کے مقرر کرنے کا تو بتایا ہے لیکن کوئی ' کٹ آف ڈیٹ ' ظاہر نہیں کی ہے۔ بس یہ کہا ہے کہ ایک تاریخ طے کر لی ہے اور یہ حملہ ضرور ہو گا۔ نیتن یاہو کا یہ جنگی اعلان قاہرہ میں جاری رہنے والے جنگ بندی مذاکرات کے فوری بعد سامنے آیا ہے،

دوسری جانب نیتن یاہو کے اس تازہ بیان کے بعد امریکہ نے کہا ہے کہ وہ اب بھی رفح پر کسی بڑے حملے کا مخالف ہے۔ امریکی دفتر خارجہ کے ترجان میتیھیو ملر نے یہ بھی کہا ہے ۔ ایک طرف رفح میں شہری آبادی کے لیے بڑا خطرہ پیدا ہو جائے گا تو دوسری جانب خود اسرائیلی سلامتی کے لیے مسائل پیدا ہوں گے۔

اسرائیلی وزیر اعظم نیتن یاہو نے رفح پر مقرر کردہ تاریخ کا ادھورا ذکر کرتے ہوئے یہ بھی کہا کہ انہیں قاہرہ میں جنگ بندی مذاکرات کے بارے میں آج ہی تازہ رپورٹ مل گئی ہے۔ 'ہم مسلسل اپنے اہداف کے حصول کے لیے کام کر رہے ہیں۔ کہ اپنے تمام یرغمالیوں کو رہا کرائیں اور حماس پر مکمل فتح حاصل کریں۔'

ادھر وائٹ ہاؤس نے پیر کے روز ایک بیان میں کہا ہے' قاہرہ میں جنگ بندی کے لیے سامنے آنے والی نئی تجاویز سے حماس کو آگاہ کر دیا گیا ہے۔ اب حماس پر ہے کہ وہ ان تجاویز کا کیا رد عمل دیتا ہے۔ ' واضح رہے سات اکتوبر سے اب تک غزہ میں 33207 فلسطینی ہلاک ہو چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں